بھارت میں سائنسدانوں کو 2ارب سال پرانی ایسی چیز مل گئی کہ پوری دنیا دنگ رہ گئی، کوئی سوچ بھی نہ سکتا تھا کہ۔۔۔

بھارت میں سائنسدانوں کو 2ارب سال پرانی ایسی چیز مل گئی کہ پوری دنیا دنگ رہ ...

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) زمین اربوں سال قبل وجود میں آئی تاہم اس پر زندگی کی ابتداءکے متعلق تاحال حتمی طور پر کچھ معلوم نہیں کیا جا سکا۔ اب بھارت میں اس حوالے سے ایک ایسی دریافت ہوئی ہے کہ پوری دنیا کے سائنسدان ششدر رہ گئے۔ ویب سائٹ rawstory.comکی رپورٹ کے مطابق بھارت کے ماہرین ارضیات نے ریاست اترپردیش کے علاقے بندیل کھنڈ میں جھانسی شہر کے قریب سے 2ارب سال پرانی باقیات دریافت کی ہیں۔ یہ اب تک دریافت ہونے والی کسی بھی ذی روح کی قدیم ترین باقیات ہیں۔

خالی کھیت میں آدمی کو اچانک 1500 سال پرانی ایک ایسی چیز پڑی نظر آگئی کہ پل بھر میں مالا مال ہوگیا، کیا تھا؟ جان کر آپ بھی کہیں گے قسمت ہو تو ایسی

ماہر ارضیات نریش گھوس نے ناگ پور میں ہونے والی انڈین جیالوجیکل کانفرنس میں اس دریافت کے حوالے سے بتایا کہ ”یہ مائیکرو اجسام کی حامل باقیات ہیں جو ممکنہ طور پر بیکٹیریا یا پروکریاٹس کی ہو سکتی ہیں۔“ سائنسدانوں کے مطابق بیکٹیریا اور پروکریاٹس ہی دنیا کی پہلی زندہ مخلوق ہیں جن کے عموماًجسم ایک خلیے پر مشتمل ہوتے ہیں اوران میں نیوکلیئس بھی نہیں ہوتا۔ انہیں دیکھنے کے لیے مائیکروسکوپ کی ضرورت پڑتی ہے۔ نریش گھوس کا کہنا تھا کہ انہوں نے جو باقیات دریافت کی ہیں ان کا سائز 1ملی میٹر سے بھی چھوٹا ہے اور ان کا معائنہ مائیکروسکوپ کے ذریعے ہی کیا جا سکتا ہے۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...