الیکشن اصلاحات بل کی تیاری میں حصہ لینے والے تمام کرداروں کے گھروں پر حملے کا خدشہ ہے: شیخ رشید

الیکشن اصلاحات بل کی تیاری میں حصہ لینے والے تمام کرداروں کے گھروں پر حملے کا ...
الیکشن اصلاحات بل کی تیاری میں حصہ لینے والے تمام کرداروں کے گھروں پر حملے کا خدشہ ہے: شیخ رشید

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ حکومت نے ناموس رسالت ﷺ کے مسئلے کو جان بوجھ کر چھیڑا ہے اور مجھے خدشہ ہے کہ جس جس فرد نے الیکشن اصلاحات بل کی تیاری میں حصہ لیا ا ن کے گھروں پر حملہ نہ ہو جائے۔

مظاہرین نے منشاءاللہ بٹ کے ڈیرے پر دھا وا بول دیا

نجی ٹی وی کے پروگرام”لیکن “ میں گفتگو کرتے ہوئے عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد کا کہنا تھا کہ الیکشن اصلاحات بل میں ختم نبوت ﷺ کی شق کو جان بوجھ کر نکالا گیا تھا اور سابق وزیر اعظم نواز شریف کو اعتماد میں لا کر ہی یہ شق نکالی گئی تھی۔وزیر قانون زاہد حامد کے استعفے کی بجائے معصوم لوگوں پر گولیاں چلائی جا رہی ہیں جس کی وجہ سے لوگ مشتعل ہو رہے ہیں ۔ وزیر داخلہ احسن اقبال بیان دیتے ہیں کہ وہ فیض آباد کے نہیں پورے پاکستان کے وزیر داخلہ ہیں، احسن اقبال سے اپناگھر نہیں سنبھالا جا سکتا وہ ملک میں امن و امان کس طرح بحال کریں گے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ وزیر قانون فوری مستعفی ہو جائیں اور ملک میں انارکی فضاءکو کم کرنے میں مدد دیں۔

واضح رہے کہ انتخابات اصلاحات بل کی تیاری میں پیپلز پارٹی اور تحریک انصاف سمیت دیگر سیاسی پارٹیوں کے ممبران قومی اسمبلی شامل تھےجبکہ تحریک لبیک کے قائدین وفاقی وزیر قانون زاہد حامد کےاستعفے کا مطالبہ کر رہے ہیں۔ 

مزید : قومی