وزیراعلی پنجاب کی وفاقی وزیر قانون سے طویل ملاقات، 24گھنٹے میں 2وفاقی وزراکے مستعفیٰ ہونے کا امکان:نجی ٹی وی

وزیراعلی پنجاب کی وفاقی وزیر قانون سے طویل ملاقات، 24گھنٹے میں 2وفاقی وزراکے ...
وزیراعلی پنجاب کی وفاقی وزیر قانون سے طویل ملاقات، 24گھنٹے میں 2وفاقی وزراکے مستعفیٰ ہونے کا امکان:نجی ٹی وی

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیر اعلی پنجاب شہباز شریف نے وفاقی وزیر قانون زاہد حامد سے ملاقات کی ہے جس کے بعد ممکنہ طور پر 2وفاقی وزرا کے استعفی کا امکان ہے ۔

نجی چینل ”جیونیوز “ کا اپنے ذرائع کے حوالے سے دعوی ہے کہ وزیر اعلی پنجاب شہباز شریف اور وفاقی وزیر قانون زاہد حامد کے درمیان ایک گھنٹے سے زائد جاری رہنے والی ملاقات میں موجودہ صورتحال پر گفتگو کی گئی۔اور امکان ظاہر کیا جارہا ہے کہ اگلے چوبیس گھنٹوں میں وفاقی وزیرقانون زاہد حامد اور  انفرمیشن ٹیکنالوجی کی وزیر مملکت ا نوشے رحمان استعفی دے دیں  گی۔میڈیا رپورٹس کے مطابق دھرنے کے بعد سے پیدا ہونے والی صورتحال کو ٹھیک کرنے کے لئے شہباز شریف کافی متحرک نظر آرہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:الیکشن اصلاحات بل کی تیاری میں حصہ لینے والے تمام کرداروں کے گھروں پر حملے کا خدشہ ہے: شیخ رشید

واضح رہے کہ اس سے قبل وزیراعظم شاہد خاقان عباسی اور آرمی چیف  کے درمیان ہونے والی ملاقات میں دھرنے کا معاملہ افہام و تفہیم سے طے کرنے اور  طاقت کا استعمال نہ کرنے پر اتفاق کیا گیا تھا ۔دوسری طرف تحریک لبیک کی قیادت ختم نبوت ﷺ کے حلف نامے میں ہونے والی مبینہ تبدیلی کے خلاف وفاقی وزیر قانون زاہد حامد کے استعفیٰ کا مطالبہ کیا تھا تاہم آپریشن کے بعد تحریک لبیک کے قائدین نے اپنا مطالبہ تبدیل کرتے ہوئے وفاقی کابینہ اور حکومت سے استعفیٰ کا مطالبہ کر دیا ہے۔ 

مزید : قومی