چارچینی شہر2035میں دنیا کے ٹاپ ٹین میں شامل ہونگے

چارچینی شہر2035میں دنیا کے ٹاپ ٹین میں شامل ہونگے

  



لندن(آئی این پی/شِنہوا)برطانیہ کے آکسفورڈ ریسرچ ادارے نے حالیہ دنوں ایک رپورٹ جاری کی جس میں اندازہ لگایا گیا ہے کہ2035تک چین کے چار شہر دنیا کے چوٹی کے ان دس شہروں کی فہرست میں شامل ہو جائینگے جن کا اقتصادی حجم سب سے زیادہ ہے۔آکسفورڈ ریسرچ کی مزکورہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اس فہرست میں نیویارک،ٹوکیو،لاس انجلس اور لندن پہلے چار پوزیشنز پر ہونگے۔جبکہ چین کے شہر شانگھائی پانچویں جبکہ بیجنگ ،کوانگ جو،اور شن جن بالترتیب چھٹے،نویں،اور دسویں نمبر پر ہونگے۔اقتصادی ترقی کی رفتار کی بنیاد پر ترتیب دی گئی فہرست میں بھی چین کے چار شہر شامل کیے گئے ہیں جن میں نمبر پانچ پرشن جن،نمبرآٹھ پرتھین جن،نمبر نو پرشانگھائی اورنمبر دس پرچھون چھن رکھے گئے ہیں۔رپورٹ میں اندازہ لگایا گیا ہے کہ دنیا میں سب سے تیز اقتصادی ترقی کرنے والے شہر وں میں ترقی پزیر ملکوں کے شہر پیش پیش ہیں۔ اس فہرست میں پہلے چار شہروں میں بنگلور،ڈھاکہ،مبئی اور دہلی شامل ہیں۔

مزید : عالمی منظر


loading...