ا یو دھیا میں جوکچھ ہورہا ہے وہ عدالت کی توہین ہے، ظفریاب جیلانی

ا یو دھیا میں جوکچھ ہورہا ہے وہ عدالت کی توہین ہے، ظفریاب جیلانی

  

لکھنو(آئی این پی ) آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کے رکن اورسینیئر وکیل ظفریاب جیلانی نے کہا ہے کہ ا یو دھیا میں بڑی تعداد میں مختلف جماعتوں کے کارکنوں اور رہنماوں کی بڑی تعداد جمع ہونے سے وہاں آباد مسلمانوں میں خوف و ہراس پیدا ہوگیا ہے، آج جو کچھ ہورہا ہے وہ عدالت کی توہین ہے، مختلف پروگراموں اور بیان بازیوں کے ذریعے عدالت کو چیلنج کیا جارہا ہے ۔ بھارتی میڈیا کے مطابق آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کے رکن اورسینیئر وکیل ظفریاب جیلانی نے ایودھیا میں وشو ہندوپریشد کی جانب سے منعقد کئے جانے والے پروگرام دھرم سبھاکو بی جے پی اور آر ایس ایس کی سیاسی حکمت عملی قراردیا۔ انہوں نے کہا کہ ا یو دھیا میں بڑی تعداد میں مختلف جماعتوں کے کارکنوں اور رہنماوں کی بڑی تعداد جمع ہونے سے وہاں آباد مسلمانوں میں خوف و ہراس پیدا ہوگیا ہے۔انہوں کہا کہ آج جو کچھ اجودھیا میں ہورہا ہے وہ عدالت کی توہین ہے۔ قانون تو یہی ہے کہ جو معاملہ عدالت میں زیر سماعت ہو اس کے بارے میں کوئی ردعمل کا اظہار تو دور کی بات اس کا ذکر تک نہیں کرنا چاہئے مگر مختلف پروگراموں اور بیان بازیوں کے ذریعے عدالت کو چیلنج کیا جارہا ہے ۔

مزید :

عالمی منظر -