ڈاکٹرخالد محمود کا چہرے کے درد کی سرجری کاجدید طریقہ کامیاب

ڈاکٹرخالد محمود کا چہرے کے درد کی سرجری کاجدید طریقہ کامیاب

  



لاہور(جنرل رپورٹر)عالمی نیورو سرجری کانفرنس میں پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف نیورو سائنسز لاہور جنرل ہسپتال کے پروفیسر آف نیورو سرجری ڈاکٹرخالد محمود نے چہرے کے درد کا سرجری کی بجائے انجکشن کے ذریعے علاج کا جدید طریقہ عملی طور پر کر کے دکھایا جس پر کانفرنس میں ملک بھر سے شریک نوجوان ڈاکٹرز نئی تکنیک کے متعلق بھرپور آگاہی دینے پر پروفیسر خالد محمود کو داد دیے بغیر نہ رہ سکے ، 3روزہ نیورو کانفرنس میں ایل جی ایچ نیورو سرجری یونٹ2کے3ڈاکٹروں نے بھی تحقیقی مقالے پیش کیے۔

،ان میں ڈاکٹر ظفدم نے آئی برواینڈ وسکو پک برین سرجری،ڈاکٹر ادیب نے بغیر اینستھیزیا دماغ سے رسولیاں نکالنے اور ڈاکٹر حسن کھوسہ نے گردن کے اوپر والے حصے پر جدید تکنیک کے استعمال کے موضو عات پر اپنے ریسرچ پیپرپڑھے۔

۔ کانفرنس میں گفتگو کرتے ہوئے پروفیسر خالد محمود کا کہنا تھا کہ ماضی میں دماغی رسولیوں اور چہرے کی بیماریوں کے بارے میں مریضوں کو خاصی پریشانی کا سامنا کرنا پڑتا تھا لیکن جدید طب اور روز افزوں سامنے آنے والی تحقیق اور ترقی نے اس مرض کا علاج آسان کر دیا ہے اور اب " ٹریجمنل نیوریلجیا"کی بیماری سے نجات کیلئے مریضوں کو زیادہ دیر قیام نہیں کرنا پڑتا ،انہیں چہرے کے دردسے فوری آرام مل جاتا ہے ،انہوں نے بتایا کہ اس طریقہ علاج میں مریضوں کو کم سے کم ادویات اور مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے ،پروفیسر خالد محمود نے نوجوان ڈاکٹروں پر زور دیا کہ وہ اس طریقہ علاج کو زیادہ سے زیادہ اپنائیں اور سینئر ڈاکٹر ز کے تجربات سے مستفید ہو کر دکھی انسانیت کی بہتر سے بہتر انداز میں خدمت کریں ،انہوں نے اس طرح کی کانفرنس کے انعقاد کو بھی سراہا جس میں ڈاکٹروں کو جدید ریسرچ ایک ہی چھت تلے میسر ہوتی ہے ،پروفیسر خالد محمود نے نواب شاہ میں ہونے والی اس 3روزہ کانفرنس میں پاکستان سمیت جنرل ہسپتال کی بھرپور نمائندگی پر مسرت کا اظہار کیا اور اسے نیورو کے شعبے کیلئے قابل قدر اقدام قرار دیا ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...