جعلی ایف آئی آر درج کرانے کے خلاف عمائدین علاقہ رستم میڈیا کلب پہنچ گئے

جعلی ایف آئی آر درج کرانے کے خلاف عمائدین علاقہ رستم میڈیا کلب پہنچ گئے

  



رستم(تحصیل رپورٹر) رستم پیسکو سب ڈویژن کی جانب سے معزز شہریوں پر جعلی ایف آئی آر درج کرانے کے خلاف عمائدین علاقہ رستم میڈیا کلب پہنچ گئے ، مقامی ایس ڈی او پر واپڈا آئین کی خلاف ورزی ، اختیارات کے ناجائز استعمال اور بد اخلاقی کے الزامات کی بوچھاڑ لگادی، آئی جی پشاور اور چیف پیسکو سے فوری کاروائی کا مطالبہ۔ تفصیلات کے مطابق رستم کے نواحی علاقہ جمڈھیر تحصیل رستم کے خان شیر خان ، ناظم کٹہ خٹ سجاد احمد، ناظم کوتر پان رشید احمد، نائب ناظم کوتر پان مولانا عالمگیر، سید محمد سہیل باچہ، چیئر مین عظیم شاہ اور دیگر 200 افراد پر مشتمل وفد نے رستم میڈیا کلب میں پریس کا نفرنس کے دوران بتایا کہ گزشتہ روز پیسکو سب ڈویژن رستم کے ایس ڈی او سجاد خان واپڈا اہلکار اور پولیس نفری کے ہمراہ ممتاز سماجی شخصیت خان شیر خان کے حجرے میں زبردستی گھس کر بغیر کسی وجہ ہمارے بجلی میٹر کا کنکشن کاٹ کر میٹر ساتھ لے جانے لگے ہم نے مقررہ تاریخ پر بجلی کا جمع شدہ بل بھی دکھایا لیکن انہوں ایک بھی نہ سنی ، اس دوران ایس ڈی او نے ہمیں پولیس کے سامنے زد وکوب کر نے کے ساتھ ساتھ گالی گلوچ اور نازیبا الفاظ بھی استعمال کئے اور ساتھ ہی ایک بزرگ شہری پر پستول تھام گریبان سے پکڑا جو ایک سرکاری اور ذمہ دار آفیسر کو زیب نہیں دیتا ، زبردستی میٹر لینے کے بعد ہم پر تھانہ رستم میں جھوٹی ایف آئی آر بھی درج کرادی انہوں نے مزید کہا کہ واپڈا آئین PLD-1988-LH512 میں صاف لکھا گیا ہے کہ میٹر اور کیبل کنزومر کی پراپرٹی ہے بجلی بل جمع نہ کرنے پر واپڈا اہلکار صرف بجلی منقطع کرنے کا اختیار رکھتا ہے میٹر ساتھ لے جانے کا کوئی اختیار ان کو حاصل نہیں انہوں نے آئی جی خیبر پختونخوا اور چیف پیسکو پشاور سے ایس ڈی او رستم سجاد خان کو سات دن کے اندر اندرمعطل کرکے ان کے خلاف قانونی کاروائی کا مطالبہ کیا ہے بصورت دیگر اہلیان جمڈھیر رستم مردان روڈ پر دھرنا دیں گے جس کی تمام تر ذمہ داری واپڈا حکام اور انتظامیہ پر عائد ہوگی۔۔۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...