لاہورمیں3دہشتگرد داخل ، کالعدم تنظیموں کے پولیس افسروں بیورو کریٹس سے گہرے مراسم فورتھ شیڈول سے نام نکلوانے میں کامیاب

لاہورمیں3دہشتگرد داخل ، کالعدم تنظیموں کے پولیس افسروں بیورو کریٹس سے گہرے ...

  



لاہور(رپورٹ؛۔ یو نس با ٹھ) تازہ اطلاعات کے مطابق کالعدم تنظیم سے تعلق رکھنے والے 3 دہشت گرد شہر میں داخل ہوگئے ہیں، دہشت گرد سرکاری اور حساس اداروں کے افسران کو ہدف بنا سکتے ہیں، دہشت گردوں کی عمریں 15 سے 20 سال کے درمیان ہیں ۔ جس کے بعد شہر بھر میں سرچ اینڈ کومبنگ آپریشنز کا سلسلہ تیزکر دیا گیا۔وفاقی وزارت داخلہ کو بھجوائی جانے والی رپورٹس میں انکشاف کیا گیا کہ پنجاب میں جو کا لعد م تنظیمو ں کی لسٹ مر تب کی گئی ہے ۔اس میں کئی کالعدم تنظیموں کے کارکنوں کے نام شامل ہی نہیں۔پنجاب میں رینجر ز کی جا نب سے مر تب کی جا نیوالی سفارشات پر بھی عملدرآمد نہیں ہو سکا اورقا نو ن نا فذ کر نے وا لے اداروں کے پنجاب میں جاری سرچ آپریشن کا غذی کاروائیوں تک محدودرہے۔ بتایا گیا ہے کہ پنجاب میں کالعدم تنظیموں کے کارکن متحر ک ہو نے لگے جبکہ پو لیس افسران اور بیو رو کر یٹ سے بھی انکے گہر ے مرا سم کا انکشا ف ہوا ہے ۔ صوبائی محکمہ داخلہ کے احکام نے کہا کہ پنجاب میں کالعدم تنظیموں کی سرگرمی کو مانیٹر کیا جا رہا ہے دوسری جانب کالعدم تنظیموں نے بعض بیو رو کر یٹ کے ساتھ اپنے گہرے روابط کا فائدہ اٹھاتے ہوئے فورتھ شیڈول سے کئی نام خارج کروا لئے تھے اور نشان دہی کے با وجود انکے نا م دوبا رہ نہیں ڈا لے گئے ۔پنجا ب حکو مت کے ذرئع کا کہنا ہے کہ پنجا ب میں کسی بھی کالعدم تنظیم کے کارکن کو معافی نہیں دی جا ئی گی اور ان کے خلاف کاروائی میرٹ پر ہو گی۔معلوم ہوا کہ قانون نافظ کرنے والے ادارے نے ایک رپورٹ مرتب کی ہے جس پراعلیٰ عہدیداروں کو بر یفنگ بھی دی گئی ہے ۔ اس رپورٹ کے ساتھ 5صفحات پر تجزیات اور سفارشات بھی شامل ہیں۔ ذرائع کا دعویٰ ہے کہ پنجاب میں جو کا لعد م تنظیمو ں کی لسٹ مر تب کی گئی ہے ۔اس میں کئی کالعدم تنظیموں کے کارکنوں کے نام شامل ہی نہیں، چنانچہ ایک انتہائی اہم حساس ادارے نے پنجاب کی طرف سے ان بوگس رپورٹس کو بے نقاب کیا اور پھر کئی نام وزارت داخلہ کی فہرست میں دوبارہ شامل کئے گئے۔ جبکہ متعدد نا م ایسے بھی ہیں جو تا حا ل اس لسٹ میں شا مل نہیں ہیں۔دوسری جانب رات گئے ایڈیشنل آئی جی آپریشنز نے مراسلہ جاری کر دیا کہ کالعدم تنظیم سے تعلق رکھنے والے 3 دہشت گرد شہر میں داخل ہوگئے ہیں، دہشت گرد سرکاری اور حساس اداروں کے افسران کو ہدف بنا سکتے ہیں، دہشت گردوں کی عمریں 15 سے 20 سال کے درمیان ہیں، تینوں دہشت گرد بارودی آلات کے استعمال کے حوالہ سے مکمل تربیت یافتہ ہیں، ریلوے اسٹیشن، بس اڈوں سمیت دیگر حساس تنصیبات کی سکیورٹی بڑھا دی جائے، جس کے بعد شہر بھر میں سرچ اینڈ کومبنگ آپریشنز کا سلسلہ تیزکر دیا گیا۔

دہشت گرد داخل

مزید : صفحہ آخر


loading...