سانحہء کلایا مذہبی ہم آہنگی کو سبوتاژ کرنے کی سازش ہے،شہریارآفریدی

سانحہء کلایا مذہبی ہم آہنگی کو سبوتاژ کرنے کی سازش ہے،شہریارآفریدی

  



کوہاٹ(این این آئی) وزیرمملکت برائے داخلہ شہریارآفریدی نے ’سانحہء کلایا‘ مذہبی ہم آہنگی کو سبوتاژ کرنے کی سازش قرار دیتے ہوئے ایسی تمام سازشوں کو ناکام بنانے پر زوردیا ہے۔ وہ اتوار کے روز قبائلی ضلع اورکزئی کے صدرمقام کلایا پہنچنے پر دربار امام بارگاہ میں جمعہ کے روز ہونیوالے خودکش بم دھماکے میں شہید ہونیوالوں کے اہل خانہ سے ملاقات کے دوران مختصر گفتگو کررہے تھے۔اْنہوں نے کہا ملک میں عدم استحکام پیدا کرنیوالے مٹھی بھر ملک دشمن عناصر کا ڈٹ کر مقابلہ کریں گے ۔وزیرمملکت نے شہداء کے لواحقین سے اظہارہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے تعزیت کی اور کہا وہ شہداء کے لواحقین کے غم میں برابر کے شریک ہیں۔اْنہوں نے لواحقین کیلئے مالی امداد اور علاقے میں صحت ‘ تعلیم کا معیار بہتربنانے سمیت بے روزگاری کے خاتمے کیلئے اقدامات اٹھانے کا بھی اعلان کیا۔ا س موقع پر اورکزئی سے منتخب رکن قومی اسمبلی جوادحسین بھی موجودتھے ۔وزیرمملکت نے کلایا بازار میں جائے وقوعہ کا معائنہ بھی کیا جہاں خودکش بم دھماکے میں 33قیمتی جانیں ضائع ہوئی تھیں۔ بعدازاں وہ بذریعہ ہیلی کاپٹر کوہاٹ پہنچے جہاں شہریار آفریدی نے ڈویژنل ہیڈکوارٹرہسپتال کوہاٹ میں زیر علاج زخمیوں سے ملاقات کی اور سانحہ کلایا میں زخمی افرادکی عیادت کی۔اس موقع پر اْنہوں نے ہسپتال کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ اور دیگر حکام کو سختی سے ہدایت کی کہ زخمیوں کی نگہداشت میں کوئی کسراْٹھانہ رکھی جائے اور زیرعلاج تمام زخمی افراد کو تمام سہولیات مہیاکی جائیں۔واضح رہے کسی وزیرمملکت برائے داخلہ کا قبائلی ضلع کا یہ پہلا دورہ ہے۔ اس موقع پر انہوں نے واقعہ کے شہداء کیلئے امدادی پیکج کے تحت فی کس10،10لاکھ،شدید زخمیوں کو فی کس5,5لاکھ جبکہ معمولی زخمیوں کیلئے فی کس ایک ایک لاکھ روپے امدادی پیکج دینے کی بھی یقین دہانی کرائی۔

شہریارآفریدی

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...