کس معروف ترین پاکستانی نے برطانیہ میں گر جا گھر خرید کر وہاں مسجد بنا دی ؟ حامد میر نے انتہائی حیران کن انکشاف کر دیا

کس معروف ترین پاکستانی نے برطانیہ میں گر جا گھر خرید کر وہاں مسجد بنا دی ؟ ...
کس معروف ترین پاکستانی نے برطانیہ میں گر جا گھر خرید کر وہاں مسجد بنا دی ؟ حامد میر نے انتہائی حیران کن انکشاف کر دیا

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )نیا پاکستان ہاوسنگ منصوبے سے متعلق مشیر کے فرائض انجام دینے والے انیل مسرت دراصل وزیراعظم عمران خان کے قریبی دوست اور ساتھی ہیں تاہم جب سے ان کانام اس حوالے سے سامنے آیا ان پر کئی طرح کے الزامات بھی لگائے گئے لیکن اب سینئر صحافی حامد میرنے ان کا ایک ایسا کارنامہ اپنے کالم میں بیان کر دیا کہ جسے سن کر ہر مسلمان عش عش کر اٹھے گا ۔

سینئر صحافی حامد میر نے اپنے کالم میں لکھا کہ ایک پاکستانی نژاد برطانوی بزنس مین انیل مسرت نے برطانیہ میں ایک گرجا خریدا تھا۔ گرجا گھر کی انتظامیہ کو انہوں نے یہ بتایا تھا کہ وہ گرجے کی زمین پر ایک کمرشل عمارت تعمیر کریں گے لیکن بعد میں انہوں نے وہاں پر ایک مسجد بنوا دی۔ جب میں نے انیل مسرت سے اس بارے میں پوچھا تو انہوں نے بتایا کہ واقعی انہوں نے ایک گرجا خریدا تھا اور وہاں کمرشل پلازہ بنانے کا ارادہ تھا لیکن میرے پاس ایک عالم دین آئے اور انہوں نے تقاضا کیا کہ میں گرجے کی زمین پر مسجد بنا دوں۔ یہ ان کے لئے مشکل تھا کیونکہ انہوں نے یہ جگہ کاروباری مقصد کے لئے خریدی تھی لیکن عالم دین کے اصرار پر انہوں نے گرجے کی انتظامیہ سے بات کی اور ان سے گرجے کی جگہ مسجد بنانے کی اجازت طلب کی۔

گرجے کی انتظامیہ نے اس مسئلے پر کافی سوچ بچار کی اور آخر کار انیل مسرت کو اپنی جگہ پر مسجد بنانے کی اجازت دیدی۔ بعد ازاں انیل مسرت نے اپنے کچھ دوستوں کے ساتھ مل کر یہ مسجد تعمیر کرا دی لیکن اس کام کو کبھی شہرت حاصل کرنے کے لئے استعمال نہیں کیا۔ انیل مسرت کہتے ہیں کہ برطانیہ میں مسلمان کم ہیں لیکن اسلام زیادہ ہے کیونکہ یہاں پر انصاف ہے۔ اگر آپ ایمانداری سے محنت کریں تو بہت پیسے کما سکتے ہیں۔

مزید : قومی