برطانیہ میں آپ صرف ایک پارٹی کے عہدیداروں کے ساتھ پھرتے رہے؟ اس پر تنقید کرنے والوں کو کیا جواب دیں گے؟ صحافی کے سوال پر چیف جسٹس نے دبنگ بات کہہ دی

برطانیہ میں آپ صرف ایک پارٹی کے عہدیداروں کے ساتھ پھرتے رہے؟ اس پر تنقید کرنے ...
برطانیہ میں آپ صرف ایک پارٹی کے عہدیداروں کے ساتھ پھرتے رہے؟ اس پر تنقید کرنے والوں کو کیا جواب دیں گے؟ صحافی کے سوال پر چیف جسٹس نے دبنگ بات کہہ دی

  



لندن (ڈیلی پاکستان آن لائن) چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار برطانیہ میں فنڈ ریزنگ مہم میں مصروف ہیں ۔ ڈیم فنڈ ریزنگ کے ساتھ چیف جسٹس کی پریس کانفرنسز کا سلسلہ بھی جاری ہے۔ ایک ایسی ہی پریس کانفرنس کے دوران صحافی نے پی ٹی آئی کے حوالے سے سوال پوچھا تو چیف جسٹس نے دبنگ جواب دیا۔

سماءٹی وی کے بیورو چیف لندن کوثر کاظمی نے چیف جسٹس سے سوال کیا ’ ناقدین تنقید کا نشانہ بنا رہے ہیں، سوشل میڈیا پر کہا جارہا ہے کہ چیف جسٹس ایک ہی پارٹی کے رہنماﺅں کے ساتھ پھرتے ہیں، یہاں ایک پارٹی کے لوگ آپ کے اردگرد نظر آئے، سوشل میڈیا پر اس حوالے سے بڑی تنقید ہورہی ہے اس لیے آپ ان کو یہاں پر ہی جواب دے کر جائیں‘۔

یہاں یہ وضاحت بھی ضروری ہے کہ جن ناقدین کی بات کوثر کاظمی نے اپنے سوال میں کی ، ان میں وہ خود بھی شامل ہیں کیونکہ ان کے ٹوئٹر کا جائزہ لیا جائے تو ایسے بہت سے ٹویٹ مل جائیں گے جو عدلیہ اور چیف جسٹس کی شخصیت پر تنقید پر مبنی ہیں ۔

چیف جسٹس کی جانب سے سماءکے بیورو چیف کے سوال کادبنگ انداز میں جواب دیا گیا۔ چیف جسٹس نے سخت لہجے میں کہا ” کیا آپ اپنے چیف جسٹس کو اتنا کمزور سمجھتے ہیں، کیا آپ لوگوں نے اپنے چیف جسٹس کے بارے میں یہی تاثر قائم کیا ہوا ہے؟ ۔ میں نے تکڑ ہاتھ میں پکڑا ہوا ہے اور یہ تکڑ نہیں ہل سکتا“۔ خیال رہے کہ تکڑ پنجابی زبان میں ترازو کو کہتے ہیں۔ چیف جسٹس کے دبنگ جواب پر صحافیوں سمیت پریس کانفرنس کے شرکاءنے خوب تالیاں بجائیں۔

مزید : قومی /برطانیہ