تحریک لبیک پر بیان کے فوراً بعد کریک ڈاﺅن، یہ حکومت کا کمال ہے یا آپ کا ؟ چیف جسٹس نے اس سوال کا کیا جواب دیا؟ جان کر آپ کی ہنسی نہ رکے گی

تحریک لبیک پر بیان کے فوراً بعد کریک ڈاﺅن، یہ حکومت کا کمال ہے یا آپ کا ؟ چیف ...
تحریک لبیک پر بیان کے فوراً بعد کریک ڈاﺅن، یہ حکومت کا کمال ہے یا آپ کا ؟ چیف جسٹس نے اس سوال کا کیا جواب دیا؟ جان کر آپ کی ہنسی نہ رکے گی

  



لندن (ڈیلی پاکستان آن لائن) چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار سے تحریک لبیک کے خلاف کریک ڈاﺅن کے حوالے سے ایک صحافی نے سوال کیا تو انہوں نے آگے سے ایسا جواب دے دیا کہ آپ بھی ہنس دیں گے۔

برطانیہ میں پریس کانفرنس کے دوران معروف اینکر پرسن وقار ذکا نے چیف جسٹس کو بتایا کہ انہوں نے جہاز میں چیف جسٹس کا ایک انٹرویو کیا تھا جس کی انہیں 1500 ڈالر آمدنی ہوئی ہے۔ وقار ذکا نے اس ویڈیو سے جمع ہونے والے پیسے ڈیم فنڈ میں دینے کا اعلان کیا۔ خیال رہے کہ چیف جسٹس جس جہاز میں ڈیم فنڈ ریزنگ کیلئے برطانیہ روانہ ہوئے تھے اس میں وقار ذکا بھی موجود تھے جنہوں نے ان کا فیس بک پر ایک مختصر انٹرویو کیا تھا۔

وقار ذکا کے بعد ایک صحافی نے تحریک لبیک کے خلاف ہونے والے کریک ڈاﺅن کے حوالے سے بات کی۔ صحافی نے چیف جسٹس سے کہا ” خادم رضوی پر ایکشن ہوا، حکومت کہتی ہے کہ یہ معاملہ 25 کی ریلی کی وجہ سے ہم نے کیا لیکن ہم آپ کا شکریہ ادا کر رہے ہیں کیونکہ جیسے ہی آپ سے اس حوالے سے سوال ہوا اس کے 2 دن بعد ہی ایکشن ہوگیا۔ لوگوں نے مجھے بھی شاباش دی لیکن وقار ذکا کی طرح میرے پاس 1500 ڈالر تو جمع نہیں ہوئے لیکن پھر بھی آپ کا شکریہ کیونکہ جو ایکشن لیا گیا وہ بہت ہی ناگزیر تھا“۔

صحافی کی جانب سے اتنی لمبی تمہید باندھے جانے پر چیف جسٹس نے کھڑے ہوتے ہوئے کہا ” آپ شاباش لیتے جائیں“۔

خیال رہے کہ کچھ روز پہلے چیف جسٹس کے برطانوی پارلیمنٹ کے دورے کے دوران صحافیوں نے ان سے تحریک لبیک کے حوالے سے سوال پوچھا تھا جس پر چیف جسٹس نے کہا تھا کہ کچھ دن کا انتظار کیا جائے۔ چیف جسٹس کے اس بیان کے 2 روز بعد ہی ملک بھر میں تحریک لبیک کے خلاف کریک ڈاﺅن شروع ہوگیا تھا۔

مزید : قومی


loading...