”دہشتگردوں کو ہلاک کرنے کے بعد میں قونصل خانے میں داخل ہوئی تو ۔۔“ سہائے عزیز تالپور کے ساتھ قونصل خانے میں داخل ہوتے ہی کیاواقعہ پیش آیا ؟ حیران کن بات بتا دی

”دہشتگردوں کو ہلاک کرنے کے بعد میں قونصل خانے میں داخل ہوئی تو ۔۔“ سہائے ...
”دہشتگردوں کو ہلاک کرنے کے بعد میں قونصل خانے میں داخل ہوئی تو ۔۔“ سہائے عزیز تالپور کے ساتھ قونصل خانے میں داخل ہوتے ہی کیاواقعہ پیش آیا ؟ حیران کن بات بتا دی

  



کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن )کراچی میں واقع چینی قونصلیٹ میں دہشتگردوں نے حملہ کیا لیکن سیکیورٹی فورسز کی بر وقت کارروائی پر حملہ آور اپنے ناپاک عزائم میں ناکام رہے اور تینوں کو ہلاک کر دیا گیا جبکہ دو پولیس اہلکار اور شہری بھی شہید ہوئے تاہم اس آپریشن کی سربراہی اے ایس پی سہائے عزیز تالپور نے کی اور ان کی پستول تھامے ہوئے تصاویر انٹرنیٹ پر وائرل ہو گئی ہیں ۔

تفصیلات کے مطابق اے ایس پی سہائے عزیز تالپور اس وقت گاڑی پر دفتر جارہی تھیں جب انہیں حملے کی اطلاع ملی اور انہوں نے فوری موقع پر پہنچ کر پوزیشن سنبھالی اور ساتھ ہی مزید نفری بھی طلب کر لی۔سہائے عزیز تالپور نے بیان دیتے ہوئے کہاہے کہ جب میں قونصل خانے میں داخل ہوئی تو وہاں پر مجھے ایک چینی خاتون اور تین چار پاکستانی نظر آ ئے ، چینی خاتون نے مجھے دیکھا اور میرے گلے لگ گئی اور میں نے اسے بتایا کہ آپ محفوظ ہیں اور حالات قابو میں ہیں ۔سہائے عزیز تالپور کا کہناتھا کہ ایک خاتون مرد کی نسبت زیادہ اچھی تفتیش کار بن سکتی ہے کیونکہ وہ ہر چیز کو گہرائی سے دیکھتی ہے اور یاد رکھنے کی زیادہ صلاحیت رکھتی ہے ۔

مزید : قومی


loading...