ملکہ حسن کی ایسی شرمناک تصاویر سامنے آگئیں کہ تاج ہی واپس لے لیا گیا

ملکہ حسن کی ایسی شرمناک تصاویر سامنے آگئیں کہ تاج ہی واپس لے لیا گیا
ملکہ حسن کی ایسی شرمناک تصاویر سامنے آگئیں کہ تاج ہی واپس لے لیا گیا

  



ایڈنبرا(مانیٹرنگ ڈیسک) سکاٹ لینڈ کی 35سالہ ماڈل نتالی پاویلیک نے ستمبر میں ’مسز سکاٹ لینڈ ورلڈ‘ نامی مقابلہ حسن میں حصہ لیا اور فتح کا تاج اپنے سر پر سجا لیالیکن اب اس کے ماضی کے متعلق ایسا شرمناک انکشاف منظرعام پر آ گیا ہے کہ مقابلہ حسن کی انتظامیہ نے اس سے تاج واپس لے لیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق انتظامیہ کو اب معلوم ہوا ہے کہ نتالی ماضی میں برہنہ ماڈلنگ بھی کرتی رہی ہے، جب وہ عمر کی 20کی دہائی میں تھی۔ تب اس نے بالغوں کے میگزینز زو اور نٹس سمیت کئی دیگر رسالوں کے لیے برہنہ فوٹوشوٹ کروائے تھے۔

نتالی اس وقت اپنے درمیانی نام پائیک (Pike)سے جانی جاتی تھی، جس کی وجہ سے مقابلے کی انتظامیہ کو اس کے ماضی کے بارے میں معلوم نہ ہو سکا اور خود نتالی کا بھی کہنا ہے کہ ”مجھے نہیں معلوم تھا کہ مقابلے میں شرکت کے لیے مجھے اپنے ماضی کے متعلق بھی انتظامیہ کو بتانا تھا۔“ اب انہیں کہیں سے اس حوالے سے خبر ملی اور انہوں نے پڑتال کی تو نتالی کا شرمناک ماضی ان کے سامنے آ گیا جس پر انہوں نے اس سے تاج واپس لے کر مقابلے میں دوسرے نمبر پر آنے والی ایلینا سٹاٹ کو پہنا دیا ہے۔ نتالی نے تاج واپس لیے جانے پر الٹا مقابلے کی انتظامیہ پر الزام عائد کر دیا ہے کہ وہ خواتین کی تضحیک کرتے ہیں۔ میں ماضی میں جو کچھ کرتی رہی ہوں وہ میں نے کبھی کسی سے نہیں چھپایا، بلکہ مجھے اس پر فخر ہے۔ میں اپنی ابتدائی عمر میں جو فیصلے لیے، آج میں جو کچھ ہوں انہی کی بدولت ہوں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...