صحافی جمال خاشقجی کے قتل کے بعد سعودی ولی عہد پہلے غیر ملکی دورہ پر

صحافی جمال خاشقجی کے قتل کے بعد سعودی ولی عہد پہلے غیر ملکی دورہ پر
صحافی جمال خاشقجی کے قتل کے بعد سعودی ولی عہد پہلے غیر ملکی دورہ پر

  



ابوظہبی(مانیٹرنگ ڈیسک) استنبول میں واقع سعودی سفارتخانے میں صحافی جمال خاشقجی کے قتل کے بعد سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان پہلے غیرملکی دورے پر متحدہ عرب امارات پہنچ گئے ہیں۔میل آن لائن کے مطابق متحدہ عرب امارات کے اس دورے کا پہلے دن اتوار کی سہ پہر انہوں نے ایمریٹس فارمولا ون گرانڈ پریکس میں گزاری۔ اس موقع پر وہاں سپین کے سابق بادشاہ جواین کارلوس اور دبئی کے ولی عہد شہزادہ شیخ حمدان بن محمد المختوم سمیت کئی بڑی عالمی شخصیات موجود تھیں۔

رپورٹ کے مطابق شہزادہ محمد عرب امارات کے بعد مشرق وسطیٰ کے دیگر کئی ممالک کا دورہ بھی کریں گے، جہاں وہ عرب لیڈر ان کا پرجوش استقبال کریں گے جو جمال خاشقجی کے قتل کے تنازعے میں ان کے ساتھ کھڑے ہیں۔وہ آج بحرین جائیں گے جہاں وہ بحرین کے بادشاہ حمد کے ساتھ مشرق وسطیٰ سمیت بین الاقوامی صورتحال پر تبادلہ خیال کریں گے۔ واضح رہے کہ جمال خاشقجی کے قتل کے معاملے پر سعودی عرب کو عالمی سطح پر شدید دباﺅ اور تنقید کا سامنا ہے۔ حال ہی میں دو آڈیو ریکارڈنگز بھی منظرعام پر آ چکی ہیں جو جمال خاشقجی کے قتل سے پہلے اور قتل کے وقت سفارتخانے کے اندر ہونے والی گفتگو پر مبنی ہیں۔ ان ریکارڈنگز سے ترکی کے اس موقف کو تقویت ملی ہے کہ جمال خاشقجی کا قتل منصوبہ بندی کا حصہ تھا اور اس کا حکم اعلیٰ سعودی قیادت کی طرف سے دیا گیا۔

مزید : عرب دنیا