پٹواری کا معطلی پر سرکاری ریکارڈ سمیت روپوش ہونا معمول، عوام کادردسربن گیا

پٹواری کا معطلی پر سرکاری ریکارڈ سمیت روپوش ہونا معمول، عوام کادردسربن گیا

  



لاہور(عامر بٹ سے)معطلی کے بعد ریکارڈ لیکر بھاگنے کی روایت قائم،محکمہ مال کے پٹواریوں نے عوام الناس کی بڑی تعداد کو عذاب میں ڈال دیا۔محکمہ ریونیو کی انتظامی سیٹوں پر براجماناعلیٰ افسران پٹواریوں کی جانب سے ریونیو ریکارڈ اور شہریوں کی رجسٹری اور دستاویزات لیکر روپوش ہو جانے والی غیر قانونی پریکٹس کو ختم کروانے میں نا صرف بڑی طرح ناکام ہو چکے ہیں بلکہ سالہ سال سے جاری اس غیر قانونی پریکٹس کی روک تھام کیلئے کوئی بھی موثر اقدامات کرنے میں بھی کامیابی حاصل نہیں کر پائے ہیں شہریوں کی بڑی تعداد محکمہ مال کے اعلی افسران کی مجرمانہ خاموشی کیخلاف سراپا احتجاج بن گئی۔محکمہ مال کے اعلی افسران کی عدم توجہ کے باعث ریکارڈ لیکر بھاگنے کی اس پریکٹس میں تیزی سے اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔روزنامہ ”پاکستان“کی جانب سے کیے جانے والے سروے کے مطابق اس وقت بھی پٹوار سرکل کوٹ خواجہ سعید پٹواری محمد افضل ریونیو ریکارڈ اور کروڑوں روپے مالیت کی سینکڑوں رجسٹری دستاویزات لیکر فرار ہو چکا ہے۔ ذمہ دار افسران نے مجرمانہ خاموشی اختیار کر رکھی ہے اسطرح پٹوار سرکل فتح گڑھ میں تعینات پٹواری شفاقت بھٹی بھی گزشتہ کئی دنوں سے ریونیو ریکارڈ اور شہریوں کی رجسٹریاں لیکر فرار ہوگیا۔ اس کے علاوہ پٹوار سرکل موضع جلو کے پٹواری رانا ارشد معطلی کے بعد ریکارڈ لیکر رو پوش ہو گیااور شہریوں کی بڑی تعداد ریکارڈ کی واپسی کی منتظر ہے جبکہ حسب حال محکمہ ریونیو کے اعلی افسران اس پر بھی خاموش ہیں۔ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ریونیو محمد اصغر جوئیہ نے اس معاملے کا نوٹس لیتے ہوئے کہا ہے کہ کوٹ خواجہ سعید، فتح گڑھ اور جلو کے پٹوار سرکل کا ریکارڈ24گھنٹوں میں پٹوار خانہ میں موجود ہو گا خلاف ورزی کرنیوالوں کے خلاف مقدمات درج ہوں گے۔

مزید : علاقائی