میاں بیوی میں طلاق، دونوں نے اپنے بچوں کو اپنانے سے انکار کردیا

میاں بیوی میں طلاق، دونوں نے اپنے بچوں کو اپنانے سے انکار کردیا

  



لاہور(نامہ نگارخصوصی)علیحدگی کے بعد ماں باپ نے اپنے تینوں بچوں کواپنے پاس رکھنے اور ان کی ذمہ داری اٹھانے سے انکار کردیا،بچوں کی پھوپھی انہیں انصاف دلانے کے لئے لاہوہائی کورٹ پہنچ گئی۔مسٹر جسٹس انواالحق پنوں نے اس سلسلے میں دائر بچوں کی پھوپھی سویرا رمضان کی درخواست پر بچوں کے والد محمد جمیل کو تھانہ قادر پور جھنگ کے ایس ایچ او کے ذریعے 27 نومبر کوطلب کرلیا،درخواست گزار کا موقف ہے کہ اس کے بھائی اور بھابھی کے درمیان طلاق ہوچکی ہے،علیحدگی کے بعد دونوں نے نئی شادیاں کرلی ہیں اور بچوں کو بے آسراچھوڑ دیاہے،تینوں بچے صائم علی، ذوالقرنین حیدر اور ثاقب علی درخواست گزار کے پاس رہائش پذیر ہیں، بچوں کے والدین ان کے ذمہ داری اٹھانے سے انکاری ہیں،دونوں بچوں کو اپنے پاس رکھنے سے بھی معذوری ظاہر کررہے ہیں،یہ بچوں کے مستقبل کا سوال ہے،بچوں کی کفالت کی ذمہ داری ماں باپ کی ہوتی ہے یا پھر ریاست کی، بچوں کی کفالت میرے بس کی بات نہیں، بچوں کے والدین کوان کی کفالت کا حکم دیا جائے۔

مزید : علاقائی