ذیلی کمیٹی برائے کابینہ سیکرٹریٹ، ڈومیسائل اجراء کا اختیار نادرا کو دینے کیلئے قانون سازی کا فیصلہ

  ذیلی کمیٹی برائے کابینہ سیکرٹریٹ، ڈومیسائل اجراء کا اختیار نادرا کو دینے ...

  



اسلام آباد(آئی این پی )قومی اسمبلی کی ذیلی کمیٹی برائے کابینہ سیکرٹریٹ نے ڈومیسائل کے اجرا کا اختیار ضلعی انتظامیہ کے بجائے نادرا کو دینے کے لیئے قانون سازی کا فیصلہ کر لیا، جبکہ کنوینئر کمیٹی علی نواز اعوان نے صوبائی تعلیمی اداروں میں اسلام آباد کی نشستوں کا کوٹہ مختص کرنے کا مطالبہ کر دیا،کمیٹی نے اسلام آباد کی خالی آسامیوں کی تفصیلات بھی مانگ لیں جبکہ ڈپٹی کمشنر اسلام آباد نے ڈومیسائل بنانے کے لیئے نئی مجوزہ ایس او پیز بھی کمیٹی کے سامنے پیش کردیں۔پیر کو قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے کابینہ سیکرٹریٹ کی ذیلی کمیٹی کا اجلاس کنوینئر علی نواز اعوان کی صدارت میں ہوا، اجلاس میں اسلام آباد کے ڈومیسائل ہولڈرز کے لیئے ملازمتوں میں علیحدہ کوٹہ مختص کرنے کے معاملے پر غور کیا گیا، علی نواز اعوان نے کمیٹی اجلاس میں سیکرٹری داخلہ کی عدم موجودگی پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کہا کہ سیکرٹری داخلہ کیوں نہیں آئے،ایڈیشنل سیکرٹری کو تو آنا چاہیئے،یہ فیئر نہیں ہے،وزارت داخلہ حکام نے کمیٹی کو بتایاکہ سیکرٹری داخلہ پبلک اکانٹس کمیٹی کے لیئے ہونے والی محکمانہ اکانٹس کمیٹی کے اجلاس میں شریک ہیں، وزارت داخلہ داخلہ حکام نے کمیٹی کو بتایا کہ پولیس نے 20 فیصد کوٹے کے فیصلے پر عملدرآمد کیاہے، 2019 میں پولیس میں اے ایس آئی کی 17 آسامیوں میں سے 7اسلام آباد کو دی گئی ہیں جبکہ 1156 کانسٹیبل کی آسامیوں میں سے 231آسامیاں اسلام آباد کو دی گئی ہیں،جبکہ ایڈمنسٹریشن میں 2017 میں 215 خالی آسامیوں پر اسلام آباد کے 26لوگوں کو بھرتی کیا گیا ہم نیاس پر عدم اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کیس واپس بھیج دیا ہے، کمیٹی نے اسلام آباد کی خالی آسامیوں کی تفصیلات مانگ لیں، کنوینئر کمیٹی علی نواز اعوان نے کہا کہ اسلام آباد کی 22 لاکھ آبادی ہے اسلام آباد کی یونیورسٹیوں میں سارے صوبوں کا کوٹہ ہے لیکن اسلام آباد کا کوٹہ نہیں ہے،صوبوں میں بھی اسلام آباد کوٹہ ہونا چاہیئے۔

ڈومیسائل

مزید : صفحہ آخر