مشرف سے متعلق فیصلہ عدلیہ کا امتحان امید ہے، ماضی کی غلطیاں اب نہیں ہو نگی: بلاول بھٹو

      مشرف سے متعلق فیصلہ عدلیہ کا امتحان امید ہے، ماضی کی غلطیاں اب نہیں ہو ...

  



اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو نے کہا ہے کہ سنگین غداری کیس میں پرویز مشرف سے متعلق فیصلہ ہماری عدالت کا امتحان ہے،سننے میں آرہا ہے کہ عمران خان کی حکومت اس کو بچانا چاہتی ہے،ہم پرامید ہیں،جو ماضی کی غلطیاں ہوئی ہیں اب نہیں ہوں گی، عدالتوں کی طرف سے اچھے فیصلے آئیں گے،جب تک تمام ادارے عوام کی خواہشوں کے مطابق نہیں چلیں گے ہم حقیقی جمہوریت کی طرف نہیں لوٹیں گے، جو کرنا ہے کریں نہ بھاگیں گے اور نہ جھکیں گے، اصولوں پر قائم رہیں گے،سازشوں کے باوجود آصف علی زرداری کا حوصلہ بلند ہے،وہ اپنے نظریے اور مؤقف پر قائم ہیں،آصف علی زرداری صاحب کی طبیعت ناساز ہے اور ان کی صحت حکومت وسرکاری ڈاکٹرزکے ہاتھوں میں ہے۔پیر کوبلاول نے پمز میں والد آصف زرداری سے ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سابق صدر سے ملاقات ہوئی، ان سے خیریت معلوم کرنے کا موقع ملا، ان کی طبیعت ناساز ہے اور ان کی صحت حکومت وسرکاری ڈاکٹرزکے ہاتھوں میں ہے مگر تمام تر سازشوں کے باوجود آصف زرداری کا حوصلہ بلند ہے، آصف زرداری کا کہنا ہے کہ جو کرنا ہے کرلو اپنے نظریے سے نہیں ہٹیں گے، نہ بھاگیں گے نہ جھکیں گے، اصولوں پر قائم رہیں گے۔بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ جب سے عمران خان حکومت میں آیا ہے اورپیسا دو چلے جاو کی بات کرتا ہے، یہ سارے کیسز جھوٹے ہیں، سابق صدر زرداری کی پٹیشن التوا میں ہے، امید ہے انصاف ملے گا اور  جن پر الزام ثابت نہیں ہے ان کو ضمانت ملنی چاہیے، زرداری صاحب درخواست ضمانت دائر نہیں کررہے۔انہوں نے کہا کہ سازشوں کے باوجود آصف علی زرداری کا حوصلہ بلند ہے،وہ اپنے نظریے اور مؤقف پر قائم ہیں، ملک پورا عدالتوں کی طرف دیکھ رہا ہے کہ اعلیٰ عدالت کی طرف سے پیپلزپارٹی اور اس کی قیادت کیلئے کس قسم کے فیصلے آئیں گے، ہم پرامید ہیں،جو ماضی کی غلطیاں ہوئی ہیں اب نہیں ہوں گی، عدالتوں کی طرف سے اچھے فیصلے آئیں گے۔

بلاول بھٹو

مزید : صفحہ اول