خواتین کے حقوق کے تحفظ کیلئے قانون سازی کر رہے ہیں، فروغ نسیم

   خواتین کے حقوق کے تحفظ کیلئے قانون سازی کر رہے ہیں، فروغ نسیم

  



 اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) وفاقی وزیر قانون فروغ نسیم نے کہا ہے کہ پاکستان میں خواتین کے حقوق کے تحفظ کیلئے قانون سازی کر رہے ہیں،موجودہ حکومت نے خواتین کو وراثت میں حصہ، اینٹی ایپ ایکٹ، ہراسمنٹ ایکٹ جیسے قوانین کو فعال بنایا ہے، سزاؤں کو بھی سخت سے سخت تر کر دیا ہے۔ پیر کو خواتین کے خلاف تشدد کے خاتمے کے عالمی دن کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر قانون فروغ نسیم نے کہا کہ خواتین اور بچوں کے خلاف تشدد روکنے کیلئے موثر اقدامات کر رہے ہیں جبکہ قانون احتساب محتسب کے پاس پولیس کے اختیارات ہیں۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ موجودہ حکومت نے غیرت کے نام پر قتل کے خلاف قانون، بداخلاقیکے خلاف قانون بنا ئے ہیں جبکہ اینٹی ریپ ایکٹ میں تمام ترقانونی معاونت بھی کی جا رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ خواتین کو جائیداد میں حصہ کے حوالے سے قوانین بنائے گئے ہیں اور وفاقی قانون محتسب تین ماہ کے اندر ایسے کیسز کا فیصلہ سنانے کی پابند ہو گی۔ وزیر قانون نے کہا کہ وزیراعظم کی واضح ہدایات ہیں کہ کرمینل کیسز میں ہر طرح کی خامیوں کو ختم کرنے کیلئے ہنگامی بنیادوں پر کام کرنے کی ضرورت ہے۔

 فروغ نسیم

مزید : صفحہ اول