40لاکھ خاندانوں میں صحت کا رڈ تقسیم ہو چکے، ترقیاتی کامون میں تاخیر برداشت نہیں: یاسمین راشد 

    40لاکھ خاندانوں میں صحت کا رڈ تقسیم ہو چکے، ترقیاتی کامون میں تاخیر برداشت ...

  



لاہور (جنرل رپورٹر)صوبائی وزیرصحت پنجاب ڈاکٹریاسمین راشدکی زیرصدارت پنجاب ہیلتھ فسیلیٹیز مینجمنٹ کمپنی میں اعلیٰ سطحی اجلاس  ہوا۔ جس میں صوبائی سیکرٹری محکمہ پرائمری اینڈسیکنڈری ہیلتھ کئیرکیپٹن(ر) محمدعثمان، ایڈیشنل سیکرٹری ڈویلپمنٹ عمرفاروق علوی ودیگرافسران نے شرکت کی۔ صوبائی وزیرصحت نے  پنجاب کے مختلف اضلاع میں منظورشدہ ترقیاتی سکیموں کاجائزہ لیا۔ صوبائی وزیرنے صوبائی سیکرٹری صحت کیپٹن(ر) محمدعثمان کوتمام منظورشدہ ترقیاتی سکیموں کومقررہ وقت پرمکمل کرنے کی ہدایت کی۔ ترقیاتی سکیموں میں سول ہسپتال سخی سرورڈی جی خان کی اپ گریڈیشن، ڈی ایچ کیووہاڑی، زندہ پیرمیں سول ڈسپنسری کی تعمیر، ٹی ایچ کیوتونسہ ڈی جی خان کی اپ گریڈیشن، دیہی صحت مرکزبرتھی کی ٹی ایچ کیومیں منتقلی کیلئے اپ گریڈیشن، ٹی ایچ کیوشورکوٹ میں گائنی یونٹ کی اپ گریڈیشن ودیگرمنصوبہ جات شامل ہیں۔ ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا کہ ترقیاتی سکیموں بارے متعلقہ محکمہ جات سے مکمل کوآرڈینیشن میں رہیں اورافسران اضلاع میں جاکرخودجاری ترقیاتی سکیموں کاجائزہ لیاکریں ترقیاتی سکیموں میں تاخیربالکل برداشت نہیں کی جائے گی۔ دریں اثناء وزیرصحت پنجاب محکمہ سپیشلائزڈہیلتھ کئیراینڈمیڈیکل ایجوکیشن میں اجلاس کی صدارت کی۔ اس موقع پر ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا کہ پنجاب کے چالیس لاکھ سے زائدخاندانوں کوصحت انصاف کارڈتقسیم کئے جاچکے ہیں۔ ریفرل کلینکس سے آنے والے مریضوں کیلئے بہترین طبی سہولیات کویقینی بنایاجائیگا۔ انہوں نے کہا کہ ریفرل کلینکس میں گائناکولوجسٹس، آئی سپیشلسٹس، فزیشینز ودیگرسپیشلسٹس خدمات سرانجام دیں گے۔  ریفرل کلینکس میں آنے والے تمام مریضوں کاڈیٹامرتب کیاجائیگا۔ 

مزید : میٹروپولیٹن 1