بخاری کالونی‘ ٹیچر پرو حشیانہ تشدد‘ دو ملزم گرفتار‘ تفتیش کا دائرہ وسیع

  بخاری کالونی‘ ٹیچر پرو حشیانہ تشدد‘ دو ملزم گرفتار‘ تفتیش کا دائرہ وسیع

  



ملتان ( وقا ئع نگار) ملتان کے علاقے بخاری کالونی میں ٹیچر پر اوباش لڑکوں کے تشدد کرنے کے واقعہ میں مزید پیش رفت ہوئی ہے۔پولیس تھانہ کینٹ نے مدعی کے تتیمہ بیان پر مقدمہ میں نامزد ہونے والے چھ ملزمان میں سے دو ملزمان کو گرفتار کرلیا ہے۔جن کو آج ریمانڈ کیلئے عدالت میں پیش کیا جائے گا۔معلوم ہوا ہے تھانہ کینٹ کے علاقے بخاری کالونی میں تقریبا پچیس روز قبل اوباش نوجوانوں نے لڑکیوں کو چھیڑ خانی سے منع کرنے پر ٹیچر اعجاز پر تشدد کیا۔جس کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد(بقیہ نمبر31صفحہ12پر)

وزیراعلی پنجاب نے مذکورہ واقعہ کا نوٹس لیا۔تو پولیس تھانہ کینٹ حرکت میں آگئی۔ پولیس نے تشدد کے واقعہ کے مقدمہ میں مدعی کے تتیمہ بیان پر چھ ملزمان کو نامزد کردیا ہے۔اس حوالے سے کینٹ پولیس نے جب ملزمان کی گرفتاری کیلئے چھاپہ مارا۔تو دو ملزمان احمد کمال اور حسن فاروق کو گرفتار کرلیا۔ذرائع سے معلوم ہوا ہے گرفتار ہونے والوں میں مقدمہ کا مرکزی ملزم حمزہ کمال کا بھائی بھی شامل ہے۔جس نے تشدد کرنے ٹیچر کی ویڈیو بنائی تھی۔پولیس تھانہ کینٹ نے زیر حراست ملزمان کی تفتیش شروع کردی ہے۔پولیس ذرائع کے مطابق مذکورہ گرفتار ملزمان کو آج عدالت میں پیش کیا جائے گا۔اس کے علاؤہ مقدمہ کے دیگر نامزد ہونے والے ملزمان کی گرفتاری کیلئے چھاپے مارے جارہے ہیں۔واضح رہے مقامی پولیس نے تشدد کے واقعہ کی ایف آئی آر 379.337L2.148.149,دفعات کے درج کی ہے

وسیع

مزید : ملتان صفحہ آخر