ملتان سمیت مختلف شہروں میں حادثے‘ 12افراد جاں بحق

    ملتان سمیت مختلف شہروں میں حادثے‘ 12افراد جاں بحق

  



ملتان‘ میلسی‘ خانیوال‘ شادن لُنڈ‘ شاہ جمال‘ رحیم یار خان‘ وہاڑی (وقائع نگار‘ بیورو رپورٹ‘ تحصیل رپورٹر‘ نمائندہ پاکستان‘ نامہ نگار‘ نمائندہ خصوصی) مختلف حادثات اور واقعات کے دوران 12افراد ابدی نیند سو گئے تھانہ ممتاز آباد کے علاقے میں 35سالہ شخص کی نعش برآمد ہوئی ہے۔ تفصیل کے مطابق ہیڈ ڈمری نوبہار نہر کے قریب سے نامعلوم شخص جو کافی دیر سے زمین پر پڑا ہوا تھا، اہل علاقہ نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے متعلقہ پولیس کو اطلاع دی، پولیس نے جائے وقوعہ پر پہنچ کر نامعلوم شخص کو چیک(بقیہ نمبر39صفحہ12پر)

کیا جو مردہ حالت میں پایاگیا، پولیس کے مطابق ہلاک ہونے والا نشے کا عادی تھا تاہم کوئی شناخت نہ ہوسکی ہے۔ ممتاز آباد پولیس کے علاقے میں ایک شخص ٹرین کے نیچے آکر جاں بحق ہوگیا۔ بتایا جا رہا ہے کہ واجد علی پیر عمر قبرستان کے قریب ریلوے لائن پار کررہا تھا۔ کہ چانک ٹرین ا?گئی۔جس کے نتیجے میں واجد علی ٹرین کے نیچے آکر جاں بحق ہوگیا اس کی عمر 45سال تھی متوفی محلہ ناصر آباد کا رہائشی تھا۔ قطب پور پولیس کے علاقے میں اڑھائی سالہ بچی پراسرار طور پر جاں بحق ہوگئی پولیس نے قتل کے شبہ میں دو افراد کو حراست میں لے لیا ہے بچی کے والد نے سسرال پر قتل کا الزام عائد کردیا پولیس نے دو افراد کو حراست میں لے کر واقعہ کا مقدمہ درج کرلیا۔بتایا جاتا ہے کہ قطب پور کے علاقے  موضع ہمروٹ  کے رہائشی محمد اسماعیل نے پولیس کو اطلاع دی کہ اس کی اڑھائی سالہ بیٹی حسنہ کو اس کے سسرال والوں نے  قتل کردیا ہے جس پر پولیس موقع پر پہنچی اور جائے وقوعہ کا جائزہ لیا بچی کی والدہ عائشہ کے مطابق اس کی شادی  تین سال قبل محمد اسماعیل سے ہوئی اس کی دو بیٹیاں حسنہ اور اومیہ ہیں۔وہ اپنے شوہر سے روٹھ کر کچھ دنوں   سے میکے رہ رہی تھی اس کی  اڑھائی سالہ بیٹی حسنہ  کچھ روزقبل سیڑھیوں سے گر گئی تھی جسے نشتر ہسپتال لے جایا گیا تاہم وہ جانبر نہ ہو سکی۔دوسری جانب عائشہ کے شوہر محمد اسماعیل نے الزام عائد کیا ہے کہ اس کی بیٹی  کو قتل کیا گیا ہے پولیس نے  عائشہ کے دو بھائیوں طارق اور خالد کو کو حراست میں لے کر تفتیش شروع کر دیا ہے۔ موٹر سائیکلوں کے تصادم کے نتیجے میں میپکو میلسی کا میٹر ریڈر کمسن بچی سمیت جاں بحق ہو گیا جبکہ بیوی اور بیٹی شدید زخمی ہو گئے۔ محلہ ریاض آباد کا رہائشی اور میپکو میلسی کا میٹر ریڈر راشد بشیر گجر گذشتہ روز اپنی اہلیہ اور بیٹیوں کے ہمراہ موٹر سائیکل پر سوار ہو کر گڑھا موڑ جا رہا تھا کہ مترو روڈ پر ہری مائنر کے قریب سامنے سے آنے والے تیز رفتار موٹر سائیکل سے اس کی ٹکر ہو گئی جس کے نتیجے میں راشد بشیر گجر اور اس کی چند ماہ کی نومولود بیٹی موقع پر ہی شدید زخمی ہو کر دم توڑ گئے جبکہ تین سالہ بیٹی حراء اور بیوی نائلہ بی بی شدید زخمی ہوئے زخمیوں کو فوری طور پر ریسکیو 1122 نے تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال میلسی منتقل کر دیا جبکہ میپکو ملازم راشد بشیر گجر اور اس کی نومولود بیٹی کا محلہ ریاض آباد میں نماز جنازہ ادا کر دیا گیا جس میں شہریوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی ایک ہی گھر سے دو جنازے اٹھنے پر محلے میں کہرام مچ گیا۔ کیری ڈبہ اور موٹر سائیکل میں تصادم سے ایک شخص جاں بحق تفصیل کے مطابق جہانیاں ٹھٹھہ صادق آباد روڈ پر چک نمبر140/10-Rکے قریب کیری ڈبہ اور موٹر سائیکل نمبرMNR -7591 میں تصادم کے باعث محمد اکرم سکنہ 132/10-Rشدید زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے موقع ہی پر چل بسا جبکہ تین دیگر جن میں عمیر،سمیہ بی بی اور شاہد ندیم شامل ہیں زخمی ہوگئے جنہیں ریسکیو1122نے ابتدائی طبی امداد کے بعد تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال جہانیاں منتقل کردیا ہے۔ شادن لُنڈ انڈس ہائی وے پر موٹر سائیکل میں تصادم میں موٹر سائیکل سوار جان بحق شادن لُنڈ بے نظیر پمپ کے نزدیک موٹر سائیکل اور رکشہ آمنے سامنے ٹکرا گئے جس کے نتیجہ میں موٹر سائیکل سوار احسان المعروف ببلی موقع پر جانبحق ہو گیا تھانہ کالا پولیس نے موقع پر پہنچ کر کاروائی شروع کر دی۔ موٹر سائیکل سوار مرد اور عورت حادثہ کا شکار ہونے کے بعد خاتون موقع پر چل بسی۔موضع بیٹ قائم شاہ کی رہائشی حسینہ مائی زوجہ غلام محی الدین اپنے عزیز اسماعیل کے ہمراہ موٹر سائیکل پر جا رہے تھے کہ حادثہ کا شکار ہو گئے جنہیں رورل ہیلتھ سنٹر شاہجمال لایا گیا تو حسینہ جاں بحق ہو چکی تھی جبکہ اسماعیل زخمی تھا جسے طبی امداد دے کر گھر بھیج دیا گیا۔ تیز رفتار ڈالا نے پانچ سالہ بچہ کچل ڈالا موقع پر جاں بحق۔ تھانہ صدر خانپور کی حدودموضع حسووالا کی رہائشی سدرہ بی بی نے پولیس کواپنی شکایت میں بیان کیا کہ اس کاپانچ سالہ کمسن بیٹا محبوب احمد جو کہ سڑک کنارے کھیل رہاتھا کہ اسی دوران ملزم ڈرائیور محمد اکبر ویگوڈالہ غفلت‘لاپرواہی اور تیز رفتاری سے چلاتے ہوئے اس کے بیٹے کو کچل ڈالا جس کے نتیجہ میں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے موقع پر ہی دم توڑگیا‘ ملزم ڈرائیور محمداکبر موقع سے فرار ہوگیا۔ والدہ کی سدرہ بی بی کی رپورٹ پر پولیس نے مقدمہ درج کرکے کارروائی شروع کردی۔ ٹریفک حادثات میں شدید زخمی ہونے والے تین افراد ہسپتال میں دم توڑگئے۔ ٹریفک کا پہلا حادثہ موضع ارائیں کے رہائشی 75سالہ جام محمد کے ساتھ پیش آیا جسے سڑک کراس کرنے کے دوران تیز رفتار کار نے ٹکر ماردی جس کے نتیجہ میں وہ شدید زخمی ہوگیا۔ دوسرا حادثہ سنجر پور کے رہائشی55سالہ نور بخت کے ساتھ پیش آیا جو اپنی موٹر سائیکل پرسوار ہوکر جارہا تھاکہ سامنے سے آنیوالے تیز رفتار ٹریکٹرنے ٹکر ماردی جس کے نتیجہ میں وہ شدید زخمی ہوگیا جبکہ تیسرا حادثہ صادق آباد کے رہائشی45سالہ علی عمران کے ساتھ پیش آیا جو اپنی موٹر سائیکل پرسوار ہوکر پیٹرول لینے پمپ پرجارہاتھا کہ سڑک کراس کرنے کے دوران تیز رفتار مسافروین نے ٹکر ماردی جس کے نتیجہ میں وہ شدید زخمی ہوگیا۔ زخمی ہونے والے تینوں افراد کو ورثاء نے طبی امداد کیلئے شیخ زید ہسپتال منتقل کیا جہاں تینوں افراد جانبرنہ ہوپائے اور دم توڑگئے جبکہ مختلف حادثات میں زخمی ہونے والے58 افراد جن میں اقبال آباد کارہائشی12سالہ محمد پرویز‘ گلشن اقبال کی20 سالہ صائمہ بی بی‘ نیازی کالونی کی18سالہ زینب بی بی‘ چک72کی56سالہ بھراواں بی بی‘ خانپور کی36سالہ حسینہ بی بی‘ کینال پارک کی65سالہ حمیداں بی بی‘ شاہ نواز کالونی کی65سالہ نذیراں بی بی‘ چک50کا47سالہ عبدالجبار‘ رحمت کالونی کا16 سالہ محمدزین اور مسلم چوک کارہائشی60سالہ محمد ابراہیم وغیرہ کو ہسپتال میں طبی امداد فراہم کی جارہی ہے۔

حادثات

مزید : ملتان صفحہ آخر