سنگین غداری کیس میں خصوصی عدالت کافیصلہ روکنے کیلئے درخواستوں پر سماعت،اسلام آبادہائیکورٹ کا وزارت قانون سے تمام ریکارڈ منگوانے کا حکم

سنگین غداری کیس میں خصوصی عدالت کافیصلہ روکنے کیلئے درخواستوں پر ...
سنگین غداری کیس میں خصوصی عدالت کافیصلہ روکنے کیلئے درخواستوں پر سماعت،اسلام آبادہائیکورٹ کا وزارت قانون سے تمام ریکارڈ منگوانے کا حکم

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)اسلام آبادہائیکورٹ نے خصوصی عدالت کافیصلہ روکنے کیلئے پرویز مشرف اور وزارت داخلہ کی درخواست پر وزارت قانون سے تمام ریکارڈ منگوانے کا حکم دیدیااور سماعت کل تک ملتوی کردی۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آبادہائیکورٹ میں خصوصی عدالت کافیصلہ روکنے کیلئے پرویز مشرف اور وزارت داخلہ کی درخواست پر سماعت ہوئی،چیف جسٹس اطہر من اللہ کی سربراہی میں جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اخترکیانی پر مشتمل بنچ نے سماعت کی ۔چیف جسٹس اطہر من اللہ نے کہاکہ پہلے ہم وزارت داخلہ کی درخواست پر سماعت کریں گے،وکیل بیرسٹر سلمان صفدر نے کہاکہ مجھے بولناکاموقع دیاجائے،چیف جسٹس اطہر من اللہ نے کہا کہ پہلے ہمیں وزارت داخلہ کی درخواست سننے دیں،آپ بیٹھ جائیں !

چیف جسٹس اطہر من اللہ نے استفسار کیا کہ سپریم کورٹ کی ڈائریکشن کیا کہتی ہے؟کیاآپ سپریم کورٹ کے آرڈر سے واقف ہو؟سرکاری وکیل نے کہا کہ نہیں !مجھے سپریم کورٹ کی ڈائریکشن کا نہیں پتہ۔چیف جسٹس اسلام آبادہائیکورٹ نے استفسار کیاکہ اس وقت ٹریبونل کس کاہے؟سرکاری وکیل نے کہا کہ جسٹس وقاراحمدسیٹھ،جسٹس نظراحمداورجسٹس شاہد کریم ٹریبونل میں ہیں۔

چیف جسٹس اسلام آبادہائیکورٹ نے کہاکہ اگر آپ کو کیس کے حوالے سے نہیں پتہ توسماعت کیسے کریں گے ؟جسٹس عامر فاروق نے استفسار کیا کہ کابینہ نے اس کی منظوری دی ہے؟ سرکاری وکیل نے کہا کہ میں تمام ریکارڈ کنفرم کرکے عدالت کو آگاہ کروں گا، چیف جسٹس اطہر من اللہ نے کہاکہ سابق صدر عدالتی مفرور ہیں، وزارت قانون سے تمام ریکارڈ منگوائے،اسلام ابادہائیکورٹ نے خصوصی عدالت کافیصلہ روکنے کیلئے مشرف اور وزارت داخلہ کی درخواست پر سماعت کل تک ملتوی کردی۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد