میاں صاحب لندن میں علاج کی بجائے واپس آکر مقدمات کا سامنا کریں: گورنر سندھ

میاں صاحب لندن میں علاج کی بجائے واپس آکر مقدمات کا سامنا کریں: گورنر سندھ
میاں صاحب لندن میں علاج کی بجائے واپس آکر مقدمات کا سامنا کریں: گورنر سندھ

  



کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)گورنر سندھ عمران اسماعیل نے کہا ہے کہ میاں نواز شریف کو لندن میں علاج کرانے کے بجائے واپس ملک آکر مقدمات کا سامنا کرنا چاہئے کیونکہ لندن کے بازاروں اور گلیوں میں وہ جس طرح رٹیل تھراپی کرا رہے ہیں اس سے ان کا وقار گر رہا ہے جبکہ مولانا فضل الرحمان کے پلان اے اور بی کا سلسلہ اب پلان ڈی اور ایچ میں داخل ہوچکا ہے اور بہت جلد ان کا پلان زیڈ بھی آجائے گا۔

سابق وفاقی وزیر جام معشوق علی کی برسی کی تقریب کے دوران میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے  گورنر عمران اسماعیل نے کہا کہ میاں نواز شریف بیماری کی وجہ بتا کر لندن گئے ہیں مگر لندن کے بازاروں اور گلیوں میں ان کی تصاویر اور وڈیوز دیکھ کر بہت افسوس ہو رہا ہے،نواز شریف لندن میں اسی گھر میں رہائش پذیر ہیں جو ملکیت اُنہوں نے تاحال اپنے اثاثوں میں ظاہر تک نہیں کی، نواز شریف کے ایسے اعمال دیکھ کر ان پر اندھا عقیدہ رکھنے والے ووٹرز کو بھی افسوس ہو رہا ہوگا۔

اُنہوں نے حیدرآباد میں خالد جتوئی کی ہمشیرہ کی فاتحہ خوانی میں شرکت بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ حیدرآباد یونیورسٹی کے معاملے میں کچھ قانونی مسائل تھے جو اب حل کر لئے گئے ہیں، حال ہی میں صدر مملکت کے پاس اس ضمن میں میٹنگ ہوئی ہے جس میں سارے لوگ موجود تھے جن میں ایچ ای سی،بحریہ اور سول ایوی ایشن سمیت دیگر شامل تھے ، یونیورسٹی کے حوالے سے بھرپور طریقے سے کام ہو رہا ہے،جو قانونی پیچیدگی تھی،وہ اب دور کرلی گئی ہے،اگلے ایک ماہ میں اس کا پی سی و ن تیار کرلیا جائے گا ،جس کے بعد اس پر کام شروع ہوجائے گا۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی