آئین کی پاسداری تمام اداروں پر لازم،جوشخص آئین کا احترام نہیں کرتا اُسکے خلاف کھڑے ہونگے:سینیٹر ساجد میر

آئین کی پاسداری تمام اداروں پر لازم،جوشخص آئین کا احترام نہیں کرتا اُسکے ...
آئین کی پاسداری تمام اداروں پر لازم،جوشخص آئین کا احترام نہیں کرتا اُسکے خلاف کھڑے ہونگے:سینیٹر ساجد میر

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)مرکزی جمعیت اہلِ حدیث پاکستان کےسربراہ سینیٹر علامہ ساجدمیر نےکہاہےکہ سپریم کورٹ کےفیصلے نےحکومتی نااَہلی کوبےنقاب کردیا، قانونی تقاضوں کو نظرانداز کرنا موجودہ حکومت کا وطیرہ بن گیا ہے،آئین کی پاسداری تمام اداروں پرلازم ہے،جوشخص آئین کااحترام نہیں کرتا ہم اسکے خلاف کھڑے ہونگے۔

مرکز راوی روڈ میں علماء کے وفود سے گفتگو کرتے ہوئےسینیٹر پروفیسر ساجد میر نےسابق آرمی چیف پرویز مشرف کے خلاف سنگین غداری کیس میں فیصلہ رکوانے کے لیے تحریک انصاف کی طرف سے اسلام آباد ہائی کورٹ سے رجوع اور عبوری ریلیف کے طور پر خصوصی عدالت کا 19 نومبر کا فیصلہ معطل کرنے کی خواہش کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے  ہوئے کہا کہ آئین شکن پرویز مشرف کو بچانے کے لیے حکومتی اقدام قابل مذمت ہے،تحریک انصاف کی حکومت نے پرویز مشرف ٹرائل کو ہمیشہ کے لیے ختم کرنے کی کوشش کی،سنگین غداری کیس کا فیصلہ پرویز مشرف کے خلاف آنے کا امکان دیکھتے ہوئے حکومت پرویز مشرف کے دفاع کے لیے میدان میں آئی۔علامہ ساجد میر کا کہنا تھا کہ وزارت داخلہ کی طرف سے یہ اقدام اس وقت سامنے آیا ہے جب چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ نے کہا کہ عدلیہ کے سامنے کوئی طاقتور نہیں ہے، عدلیہ نے دو وزرائے اعظم کو نااہل قرار دیا جبکہ ایک سابق آرمی چیف کا فیصلہ آ رہا ہے،اس کے بعد حکومت متحرک ہو گئی۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور