آغا سراج درانی سمیت دیگر کی ضمانت کی درخواستوں پر فیصلہ محفوظ

      آغا سراج درانی سمیت دیگر کی ضمانت کی درخواستوں پر فیصلہ محفوظ

  



کراچی(آئی این پی)سندھ ہائیکورٹ نے اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی سمیت دیگر کی ضمانت کی درخواستوں پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔پیر کوجسٹس عمر سیال اور جسٹس ذوالفقار علی سانگی پر مشتمل دو رکنی بینچ کے روبرو اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کی ضمانت کی درخواست کی سماعت ہوئی۔ پراسیکیوٹر نیب نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ آغا سراج کا 7ہزار ایکڑ زرعی زمین کا دعوی جھوٹا ہے۔ آغا سراج اور ان کے اہلخانہ کے پاس صرف 150ایکڑ زرعی اراضی ہے۔نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ آغا سراج نے الیکشن کمیشن میں بھی 150ایکڑ زرعی زمین درج کرائی ہے۔ ملزم نے 7ہزار ایکڑ زمین کی کوئی دستاویز پیش نہیں کی۔ ایف بی آر اور دیگر ریکارڈ کے مطابق بیشتر جائیداد 2008 کے بعد بنائی گئیں۔تفتیشی افسر نے بتایا کہ اگر آغا سراج درانی کے اجداد کے اثاثے ہوتے تو ان کے نام منتقل ہوتے۔ جسٹس عمر سیال نے ریماکس دیئے کہ نیب کی تفتیش انتہائی ناقص اور افسوسناک ہے۔جسٹس عمر سیال نے تفتیشی افسر سے مکالمے میں کہا کہ اگر ہم نے آپ کو ڈانٹا ہے تو صرف ملک اور نیب کی بہتری کیلئے۔ عدالت نے ریماکس میں کہا کہ ہمارے لیے شہریوں کا احترام بھی اہم ہے۔ تفتیش میں کسی کی تضحیک نہیں ہونی چاہیے۔عدالت نے فریقین کے دلائل مکمل ہونے پر آغا سراج اور دیگر کی درخواستوں پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔

آغا سراج/ فیصلہ

مزید : پشاورصفحہ آخر