وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی کی سیکرٹری جنرل او آئی سی سے ملاقات

وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی کی سیکرٹری جنرل او آئی سی سے ملاقات
وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی کی سیکرٹری جنرل او آئی سی سے ملاقات

  

نیامے(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نے سیکرٹری جنرل او آئی سی سے ملاقات کی ہے۔ اسلامو فوبیا ، مقبوضہ کشمیر کی صورتحال اور مسئلہ فلسطین پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق ملاقات کے دوران  وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نے کہا کہ اسلاموفوبیا کے رجحان کے خلاف مسلمانوں میں گہری تشویش پائی جاتی ہے،او آئی سی کے ذریعے اسلامو فوبیا کی حوصلہ شکنی کیلئےپیغام جانا چاہیے۔وزیرخارجہ نے کہا کہ کورونا عالمی وبا نے پوری دنیا کی معیشت کو بری طرح متاثر کیا ہے۔ 

وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نے سیکرٹری جنرل او آئی سی کو مقبوضہ کشمیرمیں ہونے والی انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں پر تشویش سے آگاہ کیا۔وزیرخارجہ نے بتایا کہ بھارت مقبوضہ جموں و کشمیر میں آبادیاتی تناسب کو تبدیل کرنا چاہتا ہے،بھارت سرکار کی ہندوتوا سوچ خطے کے امن و امان کے لیے خطرے کا باعث بنتی جا رہی ہے۔

دوسری جانب ترجمان دفترخارجہ کا کہنا ہے کہ مسئلہ کشمیر اوآئی سی کےمستقل ایجنڈےپرہے،اوآئی سی کئی دہائیوں سےمسئلہ کشمیرپراپناواضح موقف دیتی آئی ہے۔اوآئی سی کاکشمیررابطہ گروپ 15ماہ میں تین باراجلاس کرچکاہے۔پانچ اگست کےبھارتی اقدام پربھی اوآئی سی نےواضح موقف اختیارکیا۔ترجمان پاکستان دفترخارجہ مسئلہ کشمیراو آئی سی کےایجنڈےپرنہ ہونےکےمتعلق خبریں بےبنیادہیں

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -