حکومت نے گھریلو ملازمین کو قانونی تحفظ فراہم کیا،لیاقت علی

 حکومت نے گھریلو ملازمین کو قانونی تحفظ فراہم کیا،لیاقت علی

  

لاہور (لیڈی رپورٹر)سیکرٹری لیبر لیاقت علی چٹھہ کی زیر صدارت گھریلو ملازمین کے حوالے سے صوبائی ٹاسک فورس کا چوتھا اجلاس سیکرٹری لیبر آفس کے کمیٹی روم میں ہوا جس میں کمشنر پنجاب ایمپلائز سوشل سکیورٹی انسٹی ٹیوشن (پیسی) سید بلال حیدر نے گھریلو ورکرز کی رجسٹریشن اور قوانین پر عملدرآمد کے حوالے سے بریفنگ دی۔پنجاب لوکل گورنمنٹ ڈپارٹمنٹ، پنجاب کوآپریٹوڈیپارٹمنٹ اور انٹرنیشنل لیبر آرگنائزیشن کے نمائندوں نے بھی اجلاس میں شرکت کی۔سیکرٹری لیبر نے ڈومیسٹک ورکرز رولز کو حتمی شکل دے کر جلد منظور کروانے کی ہدایت کی۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے گھریلو ملازمین کو قانونی تحفظ فراہم کیاہے۔ گھریلو ملازمین کیلئے کم از کم اجرت کے تعین اور دیگر سہولیات کی فراہمی کے حوالے سے سٹیک ہولڈرز سے مشاورت جاری ہے

۔گھریلو ملازمین کو رجسٹریشن کے حوالے سے آگاہی فراہم کرنے کیلئے کیمپس لگائے گئے ہیں جبکہ گھریلو ملازمین گھر بیٹھے موبائل ایپلیکیشن کے ذریعے بھی رجسٹریشن کروا سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تقریباً 40 ہزار گھریلو ملازمین نے خود کو محکمہ لیبر سے رجسٹرڈ کروایا ہے۔سیکرٹری لیبر نے کہا کہ محکمہ ہر سال 10ارب سے زائد ویلفیئر گرانٹس رجسٹرڈ مزدوروں کو مہیا کرتا ہے۔رولز کی منظوری کے بعد رجسٹرڈ گھریلو ملازمین بھی مالی فوائد اور دیگر سہولیات حاصل کر سکیں گے۔ انہوں نے کہا کہ رواں مالی سال گھریلو اور زرعی ورکرز کے حوالے سے ڈیٹا اکٹھا کرنے کیلئے سروے کروایا جائے گا۔گھریلو اور زرعی ورکزز کو معاشی تحفظ اور صحت کی سہولیات فراہم کرنے کیلئے میکانزم بنا یا جارہا ہے۔ انہوں نے کہاکہ مزدور کارڈ پروگرام پر کام جاری ہے،11 لاکھ مزدوروں کو بنک اکاؤنٹ سے منسلک مزدور کارڈ جاری کئے جائیں گے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -