الاٹمنٹ کیس، آصف ہاشمی کیخلاف کیس کی سماعت15دسمبر تک ملتوی 

  الاٹمنٹ کیس، آصف ہاشمی کیخلاف کیس کی سماعت15دسمبر تک ملتوی 

  

لاہور(نامہ نگار)احتساب عدالت کے جج اسد علی نے سابق چیئرمین متروکہ وقف املاک بورڈ آصف ہاشمی کے خلاف غیرقانونی سرمایہ کاری اور پلاٹوں کی الاٹمنٹ کے کیس کی سماعت15دسمبر تک ملتوی کردی،گزشتہ روزنیب نے ملزمان کی بریت کی درخواستوں پر جواب جمع نہیں کروایاگیا،آصف ہاشمی سمیت دیگرملزمان عدالت میں پیش ہوئے،نیب نے عدالت میں شریک ملزم جنید احمد کی بریت کی درخواست پر جواب جمع کروا رکھا ہے دوسری جانب احتساب عدالت کے جج عزیزاللہ کلو نے آصف ہاشمی کے خلاف محکمہ تعلیم میں میرٹ سے ہٹ کر بھرتی سکینڈل کیس کی سماعت6دسمبر تک ملتوی کردی،اس کیس میں آصف ہاشمی پر فرد جرم عائد کی جاچکی  ہے۔

نیب کے پراسیکیوٹر کاموقف ہے کہ آصف ہاشمی نے بطور چئیرمین متروکہ وقف املاک بورڈ کے زیر نگرانی چلنے والے تعلیمی اداروں میں 777 افراد کو غیر قانونی طور پر بھرتی کیاجبکہ ملزم کا موقف ہے کہ نیب نے مجھ پر اختیارات کے غلط استعمال کا الزام لگایا، میں بے گناہ ہوں، اختیارات کا کوئی غلط استعمال نہیں کیا،نیب کا کیس بے بنیاد ہے،  عدالت سے استدعاہے کہ انہیں بری کرنے کا حکم دیاجائے۔

،آصف ہاشمی سمیت دیگر ملزمان پر کروڑوں روپے کی سرمایہ کاری اور اربوں روپے کے پلاٹوں کی الاٹمنٹ کا الزام ہے،آصف ہاشمی پر پلاٹوں کی الاٹمنٹ اور اختیارات کے ناجائز استعمال کا بھی الزام ہے

،نیب کے ریفرنس میں مزید کہا گیاہے کہ آصف ہاشمی نے 2009 سے 2012 کے درمیان بطور چئیرمین غیرقانونی پلاٹوں کی الاٹمنٹ اور سرمایہ کاری کی، آصف ہاشمی نے اس اقدام سے اپنے من پسند افراد کو نوازا اور قومی خزانے کو نقصان پہنچایا۔

مزید :

علاقائی -