غریبوں کو مارنے کا منصوبہ، ادویات قیمتوں میں 600فیصد اضافہ 

غریبوں کو مارنے کا منصوبہ، ادویات قیمتوں میں 600فیصد اضافہ 

  

 کوٹ ادو (تحصیل رپورٹر)وزارتِ صحت نے سینیٹ میں 2سال (بقیہ نمبر29صفحہ6پر)

کے دوران ادویات کی قیمتوں میں 311.61فیصد اضافہ تسلیم کرلیا جبکہ حکومت کے سوا3 سالہ دور میں ادویات کی قیمتوں میں 600 فیصدتک اضافہ ہوا ہے جو کہ گذشتہ 76 سالہ ملکی تاریخ میں ایک ریکارڈ ہے،پیراسٹامول سالٹ کی تمام ادویات مارکیٹ سے غائب ہیں جن میں برانڈ نام سے بکنے والے پیناڈول بھی مارکیٹ میں دستیاب نہیں اور مہنگے داموں فروخت کا سلسلہ جاری ہے، پاکستان میں پیراسٹامول سب سے سستی گولی تصور کی جاتی ہے مگر وہ اب نایاب ہے5 روپے کی ایک گولی مارکیٹ میں بک رہی ہے،وزارت نیشنل ہیلتھ سروسز اور ڈریپ نے ادویات کی قلت پر آنکھیں موند لی ہیں، ملک میں ڈینگی کا مرض شدت پر ہے اور پیراسٹامول گولی اس مرض میں اہم تصور کی جاتی ہے، ادویات کی قیمتوں میں حکومتی کنٹرول نہ ہونے کے باعث ہر ہفتے ادویات کی قیمتوں میں 5 فیصدکا اضافہ کر دیا جاتا ہے، ادویات استعمال کرنے والے لاکھوں مریض اس بلا جواز اضافہ پر ناخوش ہیں اور ان کا ماہانہ بجٹ شدید متاثر ہو رہا ہے،روزانہ ادویات استعمال کرنے والے لاکھوں مریضوں نے حکومت سے اپیل کی ہے کہ وہ اس اضافہ کو فورا روکے اور قلت والی ادویات کی دستیابی کو یقینی بنائیں۔

اضافہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -