سپین کی نیشنلٹی اور ڈرائیونگ لائسنس کیلئے غیر قانونی طریقہ اپنا کر ملک کیلئے شرمندگی کاباعث نہ بنیں ، مظہر حسین راجا

سپین کی نیشنلٹی اور ڈرائیونگ لائسنس کیلئے غیر قانونی طریقہ اپنا کر ملک کیلئے ...
سپین کی نیشنلٹی اور ڈرائیونگ لائسنس کیلئے غیر قانونی طریقہ اپنا کر ملک کیلئے شرمندگی کاباعث نہ بنیں ، مظہر حسین راجا

  

بارسلونا(ارشد نذیر ساحل )سرسال روڈ سیفٹی سپین کے صدر پروفیسر مظہرحسین راجہ نے  کہا ہک سپین کی نیشنلٹی اور ڈرائیونگ لائسنس کیلئے غیر قانونی طریقہ اپنا کر ملک کیلئے شرمندگی کاباعث نہ بنیں ۔

مظہر حسین راجا نے کہا کہ غیر قانونی طریقے سے ڈرائیونگ لائسنس حاصل کرنا یا غلط طریقہ کار سے لینگویج کورس کرکے سپین کی نیشنلٹی  حاصل کرنا قانونی و اخلاقی جرم ہے اور کسی وقت بھی پکڑے جانے پر آپ کا  لائسنس ،  نیشنلٹی کینسل ہو  سکتے  ہیں اور ساتھ بھاری جرمانہ یا جیل اور دونوں سزائیں اکٹھی بھی ہو سکتی ہیں ۔

ان کا کہنا تھا کہ آپ کے   کسی بھی حریف کی تحریری   شکایت پر آپ کے خلاف کارروائی ہو سکتی ہے حتی کہ آپ کا   دوبارہ امتحان بھی لیا جا سکتا ہے  ، کیونکہ ڈرائیونگ لائسنس کا تعلق آپ کے ذہنی علم کے ساتھ ہے جبکہ لائسنس یا سرٹیفکیٹ کوئی اہمیت نہیں رکھتا اور یہ قانون میں واضح طور پر درج ہے جس کا علم سپین میں رہنے والے ہر شخص کو ہونا چاہیے ۔ 

پروفیسر مظہر حسین نے کہا کہ  اپنے حقوق جان کر جینا چاہیے اور ان افعال سے پرہیز کرنا چاہیے جس سے آپ کے ملک کا نام بد نام ہو ،آپ کو پریشانی اٹھانی پڑے یا آپ اپنے بچوں کے لیے شرمندگی کا باعث بنیں ، جرم ، جرم ہوتا ہے اور ایک دفعہ وقوعہ ہوجانے پر آپ کی زندگی میں کبھی بھی ثابت ہو سکتا ہے ،بے شک آپ سپین  چھوڑ کر کسی بھی ملک جا کر آباد ہو جائیں،  قوم کی تعمیر علم وفن حاصل کرنے سے ہوتی ہے ،جعلی سرٹیفکیٹ  سے ایک شخص وقتی طور پر تو فائدہ لے سکتا ہے لیکن ہمیشہ کے لئے عوام کو دھوکے میں نہیں رکھا جا سکتا۔ خود بھی اچھا کام کریں اور دوسروں کے لئے بھی اچھا سوچیں ۔

مزید :

تارکین پاکستان -