کوروناوائرس کی ایک نئی خوفناک ترین قسم سامنے آگئی 

کوروناوائرس کی ایک نئی خوفناک ترین قسم سامنے آگئی 
کوروناوائرس کی ایک نئی خوفناک ترین قسم سامنے آگئی 

  

کیپ ٹاﺅن(مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا وائرس کی ایک نئی خوفناک ترین قسم منظرعام پر آ گئی ہے جس نے دنیا بھر کے سائنسدانوں کی نیندیں اڑا کر رکھ دی ہیں۔ میل آن لائن کے مطابق وائرس کی اس نئی قسم کو B.1.1.529کا نام دیا گیا ہے جس کے اب تک درجنوں کیسز سامنے آ چکے ہیں۔ ان میں سے زیادہ تر کیس جنوبی افریقہ کے صوبے گوٹنگ میں سامنے آئے ہیں جبکہ کچھ دیگر افریقی ممالک میں بھی اس نئی قسم کے مریض موجود ہیں۔

سائنسدان کورونا وائرس کی اس نئی قسم کو تباہ کن قرار دے رہے ہیں کیونکہ اس میں حیران کن طور پر 30میوٹیشنز ہیں۔ کورونا وائرس کی کسی بھی قسم میں اب تک اتنی میوٹیشنز نہیں دیکھی گئیں۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ وائرس کی یہ نئی قسم ویکسین کو 40فیصد سے زائد تک بے اثر کر سکتی ہے اور انتہائی سرعت کے ساتھ پھیلنے کی صلاحیت رکھتی ہے۔ یہ نہیں بلکہ اس سے شرح اموات بھی دیگر اقسام کی نسبت زیادہ ہو گی۔ 

رپورٹ کے مطابق اس نئی قسم کے سامنے آنے کے بعد برطانیہ نے جنوبی افریقہ سمیت 6افریقی ممالک پر نئی سفری پابندیاں عائد کر دی ہیں۔ ان دیگر ممالک میں نمیبیا، زمباوے، بوٹسوانا، لیسوتھو اور اسواتینی شامل ہیں۔برطانوی ہیلتھ سیکرٹری ساجد جاوید اور برطانوی ہیلتھ سکیورٹی ایجنسی سے وابستہ ماہر جینی ہیرس کا کہنا ہے کہ ”وائرس کی یہ قسم اب تک سامنے آنے والی تمام اقسام سے کئی گنا زیادہ خطرناک ہے، جس پر سائنسدان گہری تشویش کا اظہار کر رہے ہیں۔“

مزید :

کورونا وائرس -