گھر میں کھدائی کے دوران انسانی ڈھانچہ برآمد، یہ کون شخص تھا؟ ساری کہانی سامنے  آگئی

گھر میں کھدائی کے دوران انسانی ڈھانچہ برآمد، یہ کون شخص تھا؟ ساری کہانی ...
گھر میں کھدائی کے دوران انسانی ڈھانچہ برآمد، یہ کون شخص تھا؟ ساری کہانی سامنے  آگئی
سورس: File/Pixabay

  

راولپنڈی (ڈیلی پاکستان آن لائن)  تحصیل گوجر خان کے علاقے جاتلی میں گھر میں کھدائی کے دوران پانچ سال قبل اغوا ہونے والے گونگے بہرے شخص کی لاش نکال لی گئی۔

نجی ٹی وی اے آر وائی نیوز کے مطابق سنہ 2017 میں عاشق علی نامی گونگا بہرا شخص اغوا ہوا تھا۔ پولیس نے مغوی کے بھائی شناخت علی کی مدعیت میں ندیم نامی شخص کے خلاف مقدمہ درج کیا تھا۔ پانچ سال بعد پولیس نے ملزم ندیم کے گھر میں کھدائی کی تو وہاں سے انسانی ڈھانچہ برآمد ہوا جس کی پہچان شناخت علی نے انگوٹھی اور مصنوعی دانت سے کی۔ 

پولیس نے لاش کے ڈھانچے کو پوسٹ مارٹم کیلئے بھجوا دیا ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم ندیم نے عاشق علی کو اغوا کرنے کے بعد قتل کیا اور لاش اپنے ہی گھر میں دفنادی جو پانچ سال بعد صرف ہڈیوں کا ڈھانچہ رہ چکی ہے۔

مزید :

جرم و انصاف -علاقائی -پنجاب -راولپنڈی -