’بلاول ہاﺅس میں کون سے چوہے بیٹھے ہیں، جن کے پیٹ نہیں بھرتے‘فرخ حبیب نے سندھ حکومت پر سنگین الزام عائد کردیا 

’بلاول ہاﺅس میں کون سے چوہے بیٹھے ہیں، جن کے پیٹ نہیں بھرتے‘فرخ حبیب نے ...
’بلاول ہاﺅس میں کون سے چوہے بیٹھے ہیں، جن کے پیٹ نہیں بھرتے‘فرخ حبیب نے سندھ حکومت پر سنگین الزام عائد کردیا 
سورس: File Photo

  

 اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیر مملکت برائے اطلاعات و نشریات فرخ حبیب نے کہا ہے کہ سندھ میں گندم صوبائی سٹورز سے چوری ہوگئی، بلاول ہاؤس میں کون سے چوہے بیٹھے ہیں، جن کے پیٹ نہیں بھرتے؟بلاول بھٹو زرداری ادھر ادھر بہت تنقید کرتے ہیں، انہیں سندھ میں گندم کی قیمت کا پتا نہیں۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فرخ حبیب نے کہا کہ بلاول بھٹو زرداری ادھر ادھر بہت تنقید کرتے ہیں، انہیں سندھ میں گندم کی قیمت کا پتا نہیں، بلاول اپنی مراد علی شاہ کی حکومت سے پوچھیں، سندھ میں آٹا پورے ملک سے زیادہ مہنگا ہے، پنجاب میں 20 کلو آٹے کا تھیلا 1100روپے جبکہ سندھ میں 1500 کا ہے، سندھ میں زخیرہ اندوزوں کے سرپرست بیٹھے ہوئے ہیں، جن کے خلاف کارروائی نہیں ہورہی ہے ، پنجاب میں 160 افراد گرفتار کیے گئے،پیپلز پارٹی کی سندھ حکومت 13 سال سے عوام کا استحصال کررہی ہے، صوبائی حکومت نے عوام کو مافیا کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا ہے، سندھ کے وڈیرے کسانوں کا پانی استعمال کرجاتے ہیں۔

وزیر مملکت نے کہا کہ ان کی گورننس کے اوپر بہت زیادہ سوالات ہیں، سندھ کو این ایف سی کے تحت 1900 ارب روپے فراہم کیے گئے، ہم نے یوریا کے لیے سبسڈی فراہم کی، ایک بوری امپورٹ نہیں کرنی پڑی، سندھ میں یوریا کو ذخیرہ کیا جارہا ہے،وفاقی حکومت نے فیصلہ کیا  ڈائمنونیم فاسفیٹ(ڈی اے پی) پر کسان کو ایک ہزار فراہم کریں گے، پنجاب میں ڈی اے پی پر 11 ارب روپے فراہم کیے گئے، سندھ کا دو ارب روپے کا شیئر بنتا ہے، وفاق نے شیئر ڈالنے کےلئے خط لکھا،سندھ کی کسان دشمن پالیسیاں ہیں، وفاق سندھ کے کسان کی مدد کے لئے پیسا لےکر بیٹھا ہے تاہم صوبائی حکومت حصہ نہیں ڈال رہی۔

وزیر مملکت برائےاطلاعات نےکہا کہ وزیراعظم کو پاکستان کے عوام کی فکر ہے، جس نے بھی گراں فروشی کی کوشش کی اس کےخلاف کارروائی کی گئی، وفاقی حکومت اور پنجاب کی مداخلت سے چینی کی قیمت کم ہونا شروع ہوئی، پنجاب حکومت نے دو  لاکھ ٹن گندم برآمد کرکے ضبط کی، حکومت کوشش کررہی ہے کہ عوام پر مہنگائی کا کم سے کم بوجھ پڑے۔فرخ حبیب نے کہا کہ سندھ حکومت نے شوگر ملز بروقت چلنے نہیں دیں، صوبائی حکومت ذخیرہ اندوزوں کے خلاف کارروائی نہیں کررہی، پنجاب حکومت نے ایکشن لیا، چینی کی قیمتیں نیچے آنا شروع ہوئی۔انہوں نے کہاکہ پٹرولیم مصنوعات اور خوردنی تیل کی قیمتیں عالمی سطح پر بڑھ گئی ہیں، وفاقی حکومت نے کوشش کی اور فرٹیلائیزرز امپورٹ نہیں کی، پاکستان میں یوریا کی قیمت کنٹرول میں ہے۔

مزید :

قومی -