بھارتی فوج کو ڈرانے کے لئے چینی فون کافی ہے

بھارتی فوج کو ڈرانے کے لئے چینی فون کافی ہے
بھارتی فوج کو ڈرانے کے لئے چینی فون کافی ہے

  

نئی دہلی(نیوزڈیسک)موبائل فون اور سمارٹ فون کے ذریعے جاسوسی اب کوئی نئی بات نہیں رہی اور آئے روز ہمیں سننے کو ملتا ہے کہ امریکہ دنیا بھر میں اس طرح کی ڈیوائسسز کے ذریعے جاسوسی کر رہا ہے لیکن حال ہی میں بھارتی فضائیہ نے بھی کچھ اسی قسم کے خدشات کا اظہار کیا ہے لیکن بھارتی فضائیہ کو یہ خطرہ امریکہ سے نہیں بلکہ چین سے ہے۔

بھارتی فضائیہ نے اپنے اہلکاروں اور ان کے خاندانوں کو خبردار کیا ہے کہ وہ Xiaomi  phones ہرگز استعمال نہ کریں کیونکہ چین کی یہ کمپنی ان فونز پر رکھا گیا تمام ڈیٹا چینی حکومت کو فراہم کر رہی ہے۔ اخبار ’دی سنڈے سٹینڈرڈ ‘نے اپنی رپورٹ میں لکھا ہے کہ بھارتی فضائیہ کا کہنا ہے کہ چینی کمپنی صارفین کا تمام ڈیٹا اس ایجنسی کو بھیج رہی ہے جو براہ راست چین کی وزارت انفارمیشن کو رپورٹ کرتی ہے۔ بھارتی فضائیہ نے یہ انتباہ بھارت کی ایک کمپنی کی جانب سے کئے گئے انکشاف کے بعد جاری کیا ہے جس میں اسی قسم کے خدشات کا اظہار کیاگیا تھا۔

یاد رہے کہXiaomi  phones پر ماضی میں بھی الزامات لگتے رہے ہیں کہ وہ اپنے صارفین کا ڈیٹا ان کی اجازت کے بغیر چین کی حکومت کو کو فراہم کررہی ہے جبکہ تائیوان کی حکومت بھی اس کمپنی پر لگنے والے الزامات کی تحقیق کر رہی ہے۔تاہم کمپنی نے اپنے اوپر لگنے والے الزامات کو رد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہو سکتا ہے کہ اس کی کلاﺅڈ سروس صارفین کا ڈیٹا چین میں رکھے گئے سرورز کو بھیجتا ہے لیکن یہ کسی جاسوسی کی غرض سے نہیں کیا جاتا۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -