کچن گارڈننگ پروگرام کے تحت بیجوں کے ایک لاکھ 10ہزار پیکٹ فراہم

کچن گارڈننگ پروگرام کے تحت بیجوں کے ایک لاکھ 10ہزار پیکٹ فراہم

  

فیصل آباد(بیورورپورٹ )کچن گارڈننگ پروگرام کے تحت فیصل آبا دسمیت صوبہ بھر کے 36اضلاع کے 325سیلز پوائنٹس پر موسم سرما کی سبزیوں کے بیجوں کے ایک لاکھ 10ہزار پیکٹس فراہم کر دیئے گئے ہیں جہاں مولی ، گاجر ،شلجم ، پالک ، دھنیا ،گوبھی ، میتھی ، سلاد سمیت 8سبزیوں کا پیکٹ 50روپے کی رعائتی قیمت پر فراہم کیا جا رہا ہے جبکہ بیجوں کا ایک پیکٹ 5مرلہ جگہ پر کاشت کیلئے کافی ہے ۔گزشتہ سال موسم سرما میں کچن گارڈننگ پروگرام کے تحت سبزیوں کے ایک لاکھ پیکٹس اور موسم گرما میں 50ہزار پیکٹ فروخت کئے گئے تھے۔

انہوں نے بتایاکہ کچن گارڈننگ پروگرام کا آغاز 6 سال قبل کیا گیا تھا جبکہ اس پروگرام کے تحت اب تک 8لاکھ سے زائد معیاری بیجوں کے پیکٹس فراہم کئے جا چکے ہیں۔انہوں نے بتایاکہ حکومت پنجاب کی ہدائت پر صوبہ بھر میں زہروں کے مضر اثرات سے پاک سبزیوں کی گھریلو پیمانے پر کاشت کیلئے یہ پروگرام شروع کیا گیا جس کا بنیادی مقصد شہری آبادی ،دیہی افراد اور کاشتکاروں کو اپنی سبزیاں خود اگانے کی جانب راغب کرنا ہے۔انہوں نے کہا کہ مارکیٹ میں دستیاب سیوریج کے پانی سے اگائی جانے والی زیادہ تر سبزیوں میں بھاری دھاتیں موجود ہوتی ہیں جو انسانی صحت کیلئے مضر اور جسم میں مختلف پیچیدگیوں و بیماریوں کو جنم دے سکتی ہیں۔انہوں نے بتایاکہ کچن گارڈننگ پروگرام کے تحت کاشت کی جانے والی گھریلو سبزیاں آلودگی سے پاک ، سستی اور معیاری ہوتی ہیں۔انہوں نے بتایاکہ کچن گارڈننگ کیلئے گھر کی چاردیواری کے اندر یا باہر خالی جگہ ، لان ، صحن ، کیاریوں ، پتھر یا پلاسٹک سے بنے گملوں کو استعمال میں لایا جا سکتا ہے۔انہوں نے بتایاکہ پاکستان میں ہر شخص اوسطً 100سے 150گرام روزانہ سبزیاں استعمال کرتا ہے حالانکہ طبی نقطہ نظر سے یہ شرح انسانی خوراک میں 300سے 350گرام روزانہ ہونی چاہیے۔انہوں نے کہا کہ سبزیاں ہماری روزانہ خوراک کا بہت اہم جزو ہیں کیونکہ ان میں تمام اقسام کے معدنی نمکیات، وٹامنز ، پروٹین ، کاربوہائیڈریٹ اور مختلف بیماریوں کے خلا ف قوت مدافعت رکھنے والے اجزاء پائے جاتے ہیں۔

مزید :

کامرس -