50لاکھ گھروں کیلئے چین سے بھی سرمایہ کاری لائیں گے :وزیر اعظم

50لاکھ گھروں کیلئے چین سے بھی سرمایہ کاری لائیں گے :وزیر اعظم

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک،آئی این پی) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ہم 50 لاکھ گھر بنارہے ہیں جو بڑا ہدف ہے اور اس کیلئے چین سے بھی سرمایہ کاری لائیں گے، مشترکہ منصوبے سے بے روزگاری کا خاتمہ ہو گا،غیر ملکی سرمایہ کاروں کیلئے تمام رکاوٹیں دور کر دی ہیں،جتنی زیادہ سرمایہ کاری آئے گی غربت میں کمی ہو گی۔ان خیالات کا اظہا ر انہوں نے گزشتہ روزگلاس مینوفیکچرنگ کے حوالے سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان میں نوجوانوں کو نوکریوں کی ضرورت ہے، جس طرح سرمایہ کاری ہو گی نوکریاں بھی آتی رہیں گی، ہم سرمایہ کاری کے راستے میں رکاوٹوں کو دور کریں گے، جتنا بزنس آسان ہو گا اتنی نوکریاں ہوں گی،جتنی زیادہ نوکریاں ہوں گی اتنی سرمایہ کاری ہو گی۔وزیراعظم نے کہا کہ آئندہ ماہ چین جا رہے ہیں اور ہمیں امید ہے یہاں سرمایہ کاری ہو گی، اس طرح ہمارا تجارت کا رشتہ سی پیک کے ذریعے چین سے بڑھے گا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان وہ ملک بنے گا کہ دیار غیر سے لوگ یہاں نوکریاں کرنے آئیں گے۔ وزیراعظم عمران خان نے کہاکہ ہماری نوجوان آبادی ہے اور ہمیں نوکریوں کی ضرورت ہے، ہماری حکومت کی پالیسی سیدھی ہے۔پاکستان میں ڈیلی چائنہ اور جے ڈبلیو سیز گروپ کے تعاون سے دوسوملین ڈالر کی لاگت سے شیشے کی مصنوعات بنانے والے کمپلیکس کا قیام کی افتتاحی تقریب میں پاکستان میں چینی سفیر ، پنجاب کے وزیر صنعت ، کامرس اور سرمایہ کاری میاں اسلم اقبال ، جے ڈبلیو سیز گروپ کے صدر شاہ فیصل آفریدی ، ہائیر گروپ آف کمپنیز کے سی ای او جاوید آفریدی،ہائیر اینڈ ربا پاکستان کے ڈائریکٹر شاہ خالد آفریدی ، ڈیلی گلاس کمپنی کے چیئرمین شی وی ڈونگ اور سی ای او وینگ رونگ فو ، پرویز خٹک ، وزیرمملکت مراد سعید،علی محمد خان ،فیصل واوڈا اور عثمان ڈار بھی شریک ہوئے ۔اس موقع پر جاوید آفریدی نے کہاکہ اس منصوبے سے پاکستان کی معیشت کو فائدہ ہوگا اور بین الاقوامی مارکیٹ میں بھی پاکستان بہترین اشیا ء فراہم کرنے والا ملک بننے گا۔ جاوید آفریدی کے مطابق منصوبہ فیصل آباد میں صنعتی ایریا ایم تھری میں لگایا جائیگا، منصوبے کے خام مال کے حصول کیلئے خیبرپختونخوا میں رسال پور کے مقام پر یونٹ لگایا جائیگا۔گلاس مینیوفیکچرنگ کمپلیکس میں پہلے مرحلے میں شیشے کی مصنوعات بنانے والا یونٹ قائم ہوگا۔ دوسرے مرحلے میں فلوٹ گلاس یونٹ کا قیام جبکہ تیسرے مرحلے میں شیشے کی دیگر اشیا کی تیاری کایونٹ قائم ہوگا۔ پہلا مرحلہ2019 ء کے آخر تک مکمل ہوجائیگا۔ پہلے مرحلے کیاختتام پر دوسرے مرحلے اور تیسرے مرحلے کے قیام کیلئے پلان تیار کیا جائیگا۔

عمران خان

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعظم عمران خان نے وفاق اور چاروں صوبوں کو قومی آبی پالیسی پرعمل درآمد کو یقینی بنانے کی ہدایت کرتے ہوئے پانی کی تقسیم اور نئے ذخائر کی دستیابی کے حوالے سے آبی کونسل کی سٹیئرنگ کمیٹی کو دو ہفتوں میں رپورٹ پیش کرنے کا حکم بھی دے دیا۔وزیراعظم عمران خان کے زیر صدارت گزشتہ روز قومی آبی کونسل کا پہلا اجلاس منعقد ہوا۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے ملک کی بڑھتی ہوئی آبادی کی ضروریات پوری کرنے کیلئے پانی کی کمی کے مسئلہ پر روشنی ڈالی۔ وزیراعظم نے دستیاب پانی کی بچت، ذخیرہ کرنے، مینجمنٹ اور مؤثر استعمال کیلئے مربوط حکمت عملی پرعمل پیرا ہونے پر زور دیا۔انہوں نے کہا کہ ماضی میں پانی سے متعلق مسائل پر توجہ نہیں دی گئی۔ وزیراعظم نے قومی آبی پالیسی پر عمل درآمد کیلئے صوبوں اور دیگر متعلقہ فریقین کی مشاورت سے ایک جامع روڈ میپ تیار کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔وزیراعظم نے کہا کہ قومی آبی کونسل ایک ایسے مؤثر پلیٹ فارم کے طور پر کام کرے گی جس میں آبی وسیلے کے انتظام سے متعلق تمام مسائل پر متعلقہ فریقین کے درمیان بات چیت اور اتفاق رائے پیدا کیا جا سکے گا۔سیکرٹری آبی وسائل شمائل احمد خواجہ نے اجلاس کو قومی آبی پالیسی اور پالیسی کی اسٹریٹجک ترجیحات سے متعلق تفصیل کے ساتھ آگاہ کیا۔ انہوں نے اجلاس کو پانی کی موجودہ دستیابی کی صورتحال اور مستقبل کی سرمایہ کاری اور بالخصوص پانی ذخیرہ کرنے کی گنجائش بڑھانے کے حوالے سے آگاہ کیا۔چیئرمین واپڈا نے اجلاس کو پانی ذخیرہ کرنے اور بجلی کی پیداوار کے مختلف منصوبوں پر پیشرفت کے حوالے سے آگاہ کیا۔

وزیراعظم/اجلاس

مزید :

صفحہ اول -