پاکستان نے امت مسلمہ کو جوڑنے کیلئے کردار ادا کرنے کا فیصلہ کر لیا،اسد عمر

پاکستان نے امت مسلمہ کو جوڑنے کیلئے کردار ادا کرنے کا فیصلہ کر لیا،اسد عمر

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) وزیر خزانہ اسد عمر نے کہا ہے کہ سعودی عرب سی پیک میں براہ راست شراکت دار نہیں ہے ، پاکستان کے حصے کے جو پروجیکٹس ہیں ان میں سعودی سرمایہ کاری ہورہی ہے۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ پاکستان نے تمام مسلم اْمّہ کو جوڑنے کے لئے کردار ادا کرنے کا فیصلہ کیاہے، پاکستان یمن جنگ پر ثالثی کرے گا، سعودی عرب کو بھی پتہ ہے مشکل وقت میں کوئی آئے نہ آئے پاکستان ساتھ کھڑا ہوگا۔سعودی عرب نے پاکستان کے پیکیج کے لیے کوئی شرط رکھی ہی نہیں، حکومت آئی ایف کے پاس جانے سے پہلے سے دیگر آپشنز پر بھی کام کررہی ہے۔ پائیدار امن کیلئے سعودی عرب، یمن اور دیگر فریقیں کا بات چیت پر آمادہ ہونا ضروری ہے۔ سعودی پیکج کابڑا کام دو ماہ کی محنت سے ہوا ہے، سعودی عرب نے اس پیکج کے بدلے میں کوئی مطالبہ نہیں کیا ٗ یہ ایور گرین دوستی اور دونوں ملکوں کے لیے درمیان مضبوط تعلق کا مظہر ہے۔وزیر خزانہ نے مزیدکہا کہ چین سے بات ہوئی تھی کہ سی پیک میں کسی تیسرے ملک کی سرمایہ کاری ہونی چاہیے، سی پیک میں تیسرے ملک کی سرمایہ کاری پر چین نے آمادگی ظاہر کی۔ چین کے ساتھ فنانشل سپورٹ پر بھی کام کررہے ہیں ،اس کے ساتھ مربوط معاشی تعاون پر بات کررہے ہیں، زراعت، اقتصادی و تجارتی شعبوں میں تعاون کو بڑھائیں گے۔ آئی ایم ایف جس دن جانے کافیصلہ کیا اس سے پہلے دوسرے ذرائع پر کام کررہے ہیں، دیگر آپشن پر کام مکمل ہوگا تو پتا چلے گا کہ آئی ایم ایف سے کتنا قرض چاہئے۔

اسد عمر

مزید : صفحہ اول