صوبائی حکومت کا غذات کی حد تک تعلیمی ایمر جنسی کا نفاذ کر چکی ہے : صلاح الدین مہمند

صوبائی حکومت کا غذات کی حد تک تعلیمی ایمر جنسی کا نفاذ کر چکی ہے : صلاح الدین ...

پشاور(پ ر)عوامی نیشنل پارٹی کے نو منتخب ایم پی اے صلاح الدین مہمند نے پی کے 71پشاور میں دہشتگردی سے متاثرہ سکولوں کے دورے کے بعد باچا خان مرکز سے جاری اپنے بیان میں صوبائی حکومت کی تعلیمی ایمرجنسی پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ پانچ سال گزرنے کے باوجود بھی اُن سکولوں کو نہیں بنایا گیا جو سال دو ہزار تیرہ میں دہشتگردی سے متاثر ہوئے تھے،جو حکومت پانچ سالوں میں دہشتگردی سے متاثرہ سکولوں کو نہ بنا سکی وہ ملک سے دہشتگردی کو کس طرح ختم کریگی،گورنمنٹ ہائی سکول ماشوگگر اور گورنمنٹ پرائمری سکول ماشوگگر کے دورے کے بعد اُن کا کہنا تھا کہ صوبائی حکومت اُن اصلاحات کا کریڈیٹ لیکر تعلیمی ایمرجنسی کا نعرہ بلند کررہی تھی جو عوامی نیشنل پارٹی کی سابقہ دور میں ہوئے تھے،صوبائی حکومت کاغذات کے حد تک تعلیمی ایمرجنسی کا نفاذ کرچکی ہے،عملا صوبائی حکومت نے کچھ نہیں کیا۔اُن کا کہنا تھا کہ وہ اپنے حلقہ نیابت کے ایسے تمام سکولوں اور تعلیمی اداروں کیلئے اسمبلی فلور پر آواز اٹھائینگے جو خصوصی طور پر دہشتگردی سے متاثر ہوئے ہو اور پاکستان تحریک انصاف کے وزراء کے نظروں سے اوجھل تھے،سکول کے دورے کے بعد سکول انتظامیہ اور طالبعلموں نے ایم پی اے کا شکریہ ادا کیا اور اُن کا خراج تحسین پیش کیا کہ انہوں نے پہلا دورہ ہی دہشتگردی سے متاثرہ سکول کا کرکے یہ واضح پیغام دیا ہے کہ عوامی نیشنل پارٹی پختون سرزمین پر امن چاہتی ہے اور تعلیم کے فروغ کیلئے کوشاں ہے

مزید : پشاورصفحہ آخر