پشاور ٹیوب ویل کے بجلی بل کی ادائیگی پر ضلعی انتظامیہ اور محکمہ مواصلات میں تنازعہ شدید

پشاور ٹیوب ویل کے بجلی بل کی ادائیگی پر ضلعی انتظامیہ اور محکمہ مواصلات میں ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


پشاور(سٹی رپورٹر)شہرکے بلدیاتی ادارے ٹاؤن ون میں قائم ٹیوب ویل کے بجلی کے بل کی ادائیگی کیلئے سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ، ٹاؤن ون ،ڈپٹی کمشنردفتراورمحکمہ مواصلات وتعمیرات میں تنازعہ شدت اختیارکرگیاہے ایک سال کاتقریباً23لاکھ روپے کابجلی کابل ان چاروں دفاترمیں گھمایاجارہاہے لیکن کوئی بھی اس بل کی ادائیگی کیلئے تیارنہیں ہے چنانچہ مذکورہ ٹیوب ویل کے بجلی کے بل کی عدم ادائیگی کے باعث واپڈانے بجلی منقطع کردی ہے جسکی وجہ سے گزشتہ کئی ہفتوں سے مذکورہ دفاترمیں پانی کی شدیدقلت پیداہوگئی ہے گزشتہ روزبھی ٹاؤن ون اورسٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ کے دفاترمیں پانی کی ضروریات پوری کرنے کیلئے فائربریگیڈکی گاڑی کے ذریعے پانی لایاگیاپانی کی گاڑی کودیکھتے ہی ملازمین پانی بھرنے کیلئے گاڑی پرٹوٹ پڑے اورہرایک نے ایک دوسرے سے پہلے پانی بھرنے کی کوشش کی سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ اورٹاؤن ون کے ہربرانچ میں ملازمین نے اپنے لےئے پانی سٹورکرناشروع کردیاہے دوسری طرف بعض ملازمین پانے پینے کیلئے اپنے گھروں سے بوتلیں لے کرآرہے ہیں ٹاؤن ون دفترمیں قائم مسجدکے بیت الخلاء میں پانی نہ ہونے کے باعث دفاترمیں بدبو اور تعفن سے سانس لینا دشوار ہوگیا ہے یادرہے کہ ٹاؤن ون دفتر میں واقع ٹیوب ویل سی اینڈ ڈبلیو کی ملکیت ہے جس سے ٹاؤن ون ، سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ اورمحکمہ سی این ڈبلیو باچا خان چوک کے دفترکے ملازمین پانی استعمال کرتے ہیں یہاں یہ امربھی قابل ذکرہے ٹاؤن ون اورسٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ کے دفاترکی جگہ پہلے ڈی سی اوکادفترہواکرتاہے جوکہ اس ٹیوب ویل سے پانی استعمال کرتے تھے اوراب بھی اس ٹیوب ویل کے بجلی کابل ڈی سی اوکے نام ہی آتاہے لیکن کوئی بھی محکمہ اس بل کی ادائیگی کیلئے تیارنہیں ہے