’’نوازشریف بطور وزیراعظم عالمی اقتصادی کانفرنس میں شریک ہوئے تو ایک جاپانی سرمایہ کار نے سوال کیا کہ پاکستان میں آپ نے خود کتنی سرمایہ کاری کی تو آگے سے ۔۔‘‘ سینئر صحافی کا ایسا انکشاف کہ سن کر نوازشریف بھی شرمندہ ہو جائیں گے

’’نوازشریف بطور وزیراعظم عالمی اقتصادی کانفرنس میں شریک ہوئے تو ایک جاپانی ...
’’نوازشریف بطور وزیراعظم عالمی اقتصادی کانفرنس میں شریک ہوئے تو ایک جاپانی سرمایہ کار نے سوال کیا کہ پاکستان میں آپ نے خود کتنی سرمایہ کاری کی تو آگے سے ۔۔‘‘ سینئر صحافی کا ایسا انکشاف کہ سن کر نوازشریف بھی شرمندہ ہو جائیں گے

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )وزیراعظم عمران خان سعود ی عرب میں عالمی اقتصادی کانفرنس میں شرکت کے بعد پاکستان واپس پہنچ چکے ہیں جہاں انہوں نے سعود ی عرب سے معیشت کی بحالی کیلئے پیکج حاصل کر لیا ہے تاہم اس موقع پر کی گئی عمران خان کی تقریر پر اپوزیشن جماعتیں انہیں شدید تنقید کا نشانہ بنا رہی ہیں جبکہ گزشتہ روز مولانا فضل الرحمان پریس کانفرنس بھی کی تاہم اب سینئر صحافی ارشاد بھٹی نے اپنے جنگ نیوز میں لکھے گئے کالم میں حیرت انگیز انکشاف کر کے سب کو چونکا کر رکھ دیاہے ۔
تفصیلات کے مطابق کالم نگار ” ارشاد بھٹی “ نے اپنی تحریر میں لکھاہے کہ ’ نیا پاکستان ہاﺅسنگ سکیم پر بعد میں بات کرتے ہیں ذرا پہلے وزیراعظم کے ریاض سرمایہ کاری کانفرنس پر تنقید کرنے والے یہ سن لیں کہ نوازشریف کے دور حکومت میں وفاقی دارلحکومت میں سرمایہ کاری کانفرنس ہوئی جس میں درجنوں ممالک کے اعلیٰ عہدیداروں ، تاجروں ،نامور کمپنیوں اور کاروباری اداروں کے سرابراہان شریک ہوئے ۔ جب وزیراعظم نے اپنی تقریر سے پاکستان کو سرمایہ کاری کیلئے جنت ثابت کر دیا اور جب وزیراداخلہ سرمایہ کاروں کیلئے پاکستان کو امن کا گہوارہ بنا چکے ، جب وزیر تجارت غیر ملکی سرمایہ کاروں کو ایک پر کشش پیکج دے چکے اور جب سوال وجواب کا سیشن شروع ہوا تو ایک جاپانی کمپنی کا سربراہ کھڑا ہوا اور کہا کہ ” میں چند سوالات پوچھنا چاہتاہوں “ ، جواب دیا گیا کہ پوچھئے ۔ جاپانی کاروباری شخصیت نے کہا کہ ” کتنے پاکستانی بیرون ملک اور کتنوں کا کاروبار پاکستان میں“ جواب دیا گیا لاکھ کے قریب پاکستانی باہر اور ان کا پاکستان میں نہ ہونے کے برابر کاروبار، جاپانی نے دوسرا سوال کیا ”پاکستانی بزنس مینوں کی کتنی سرمایہ کاری پاکستان میں، کتنی باہر“ بتایا گیا، ا?دھی سے زیادہ باہر، جاپانی نے تیسرا سوال کیا ”کیا پاکستان کے سیاستدانوں، بیوروکریٹوں اور کاروباریوں نے باہر جائیدادیں بنا رکھیں“ جواب دیا گیا ”جی بالکل“ جاپانی نے آخری سوال کیا ”کیا اس ملک کے سیاستدانوں کے بیرون ملک کاروبار ہیں“ بتایا گیا ”ہاں ہیں“ یہ سن کر جاپانی بولا ”جب آپ اپنے ملک میں جائیدادیں نہیں رکھتے، جب آپ کی سرمایہ کاری باہر اور جب آپ کو اپنے ملک پر بھروسہ نہیں تو پھر غیر ملکی اپنا پیسہ یہاں کیوں لگائیں گے، جس دن آپ کا اپنا سب کچھ پاکستان میں ہوگا، غیرملکی سرمایہ کار خودبخود یہاں آجائیں گے“ یہ کہہ کر جاپانی بیٹھا اور اس کے بیٹھنے سے پہلے سرمایہ کاری کانفرنس بھی بیٹھ گئی۔

مزید :

قومی -