''عمران خان کی ثالثی پیشکش یمن سعودی عرب معاملات بہتر بنانے کیلئے نہیں بلکہ۔۔۔'' پاکستان کی پیشکش پر یمن کا سفارتخانہ بھی میدان میں آ گیا، حیران کن اعلان کر دیا

''عمران خان کی ثالثی پیشکش یمن سعودی عرب معاملات بہتر بنانے کیلئے نہیں ...
''عمران خان کی ثالثی پیشکش یمن سعودی عرب معاملات بہتر بنانے کیلئے نہیں بلکہ۔۔۔'' پاکستان کی پیشکش پر یمن کا سفارتخانہ بھی میدان میں آ گیا، حیران کن اعلان کر دیا

  

اسلام آباد (ویب ڈیسک) پاکستان میں یمن کے سفارتخانہ نے ایک وضاحتی بیان میں کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے یمن بحران کے حل کے سلسلہ میں ثالثی کی پیشکش سعودی عرب اور یمن میں معاملات کو بہتر بنانے کیلئے نہیں کی بلکہ بحران حوثی باغیوں اور یمن حکومت کے درمیان ہے۔ باغیوں کو ایران کی حمایت حاصل ہے۔

نوائے وقت کے مطابق یمنی حکومت کئی مرتبہ باغیوں کو مذاکرات کی پیشکش کرچکی ہے لیکن انہوں نے اس پیشکش کو مسترد کردیا۔ حکومت اب بھی اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق مسئلہ کا پرامن حل تلاش کرنے کیلئے مذاکرات پر تیار ہے۔ سعودی عرب اور دوسرے دوست ملکوں نے ہماری حکومت کی درخواست پر فوجی مداخلت کی اور ان کی کوشش ہے کہ ملک میں قانونی حکمرانی قائم ہوجائے۔

مزید :

قومی -عرب دنیا -علاقائی -اسلام آباد -