’اس نے مجھ سے جھوٹ بول کر شادی کی‘ خاتون اپنے شوہر کے خلاف عدالت پہنچ گئی، لیکن وجہ ایسی کہ آپ کو ہنسی آجائے

’اس نے مجھ سے جھوٹ بول کر شادی کی‘ خاتون اپنے شوہر کے خلاف عدالت پہنچ گئی، ...
’اس نے مجھ سے جھوٹ بول کر شادی کی‘ خاتون اپنے شوہر کے خلاف عدالت پہنچ گئی، لیکن وجہ ایسی کہ آپ کو ہنسی آجائے

  

احمد آباد(نیوز ڈیسک) طلاق جیسا بڑا سانحہ کسی بڑی وجہ سے ہی پیش آتا ہے، یہ الگ بات کہ کسی کے لئے ایک بات معمولی ہو سکتی ہے تو کسی اور کے لئے یہ اتنی بڑی ہو سکتی ہے کہ اس کی بناء پر طلاق کا ہی مطالبہ کر دیا جائے۔ اس بھارتی لڑکی کا کیس ہی دیکھ لیجئے جسے شادی کے کچھ عرصے بعد پتا چلا کہ شوہر برہمن نہیں تو طلاق کا مطالبہ کر دیا۔

ٹائمز آف انڈیا کے مطابق 23 سالہ ایکتا پٹیل کا کہنا ہے کہ بی کام کرنے کے بعد اس نے ایک گیس کمپنی میں ملازمت شروع کی اور کمپنی کے مالک کے بیٹے جیوتسنا مہتہ کے ساتھ اُس کی دوستی ہو گئی۔ یہ دوست آگے بڑھی اور بات محبت سے ہوتی ہوئی شادی تک جا پہنچی۔

شادی تو ہو گئی مگر جب کچھ عرصے بعد یہ جوڑا شادی کی رجسٹریشن کے لئے گیا تو وہ انکشاف سامنے آ گیا جس کا نتیجہ طلاق کی صورت میں نکلا۔ ایکتا کا کہنا ہے کہ رجسٹریشن کے وقت پتا چلا کہ اُس کا شوہر برہمن نہیں ہے بلکہ اس نے جھوٹ بول کر خود کو برہمن ظاہر کر رکھا تھا، اور اُس کے لئے یہ قابل قبول نہیں کہ برہمن ہوتے ہوئے وہ کسی غیر برہمن کی بیوی رہے۔

ایکتا نے طلاق لینے کے لئے عدالت کا دروازہ کھٹکھٹا دیا ہے۔ آپ یہ کہہ سکتے ہیں کہ جب محبت ہو گئی تو پھر ذات پات کون سا مسئلہ ہے، لیکن ایکتا کہتی ہے کہ بھاڑ میں جائے محبت، بیوی بنوں گی تو صرف برہمن کی۔ 

مزید : ڈیلی بائیٹس