کورونا سے کارپٹ انڈسٹری شدید متاثر ہوئی،ریاض احمد

کورونا سے کارپٹ انڈسٹری شدید متاثر ہوئی،ریاض احمد

  

لاہور  (اے پی پی):پاکستان کارپٹ مینو فیکچررز اینڈ ایکسپورٹرز ایسوسی ایشن کے سینئر وائس چیئرمین ریاض احمد نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کی وجہ  سے عالمی نمائش کاانعقاد نہ ہونے سے پاکستان کی کارپٹ انڈسٹری پر منفی اثرات مرتب ہوئے،کسی بھی ملک میں ہونے والی نمائش میں شرکت یقینی بنانے  کیلئے80/20کے فارمولے کومستقل پالیسی بنایا جائے۔ ان خیالات کااظہارانہوں نے ایسوسی ایشن کے ہفتہ وارجائزہ اجلاس سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر  چیئر مین کارپٹ ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ پرویز حنیف،سینئر مرکزی رہنما عبداللطیف ملک،سعید خان،میجر (ر) اخترنذیر،اکبرملک،اعجازالرحمان،دانیال حنیف،فیصل سعید خان  سمیت دیگر بھی موجود تھے۔اجلاس میں کوروناوائرس کی وجہ سے ہاتھ سے بنے قالینوں کی صنعت پر پڑنے والے اثرات کاتفصیلی جائزہ اور مختلف تجاویز پر تبادلہ خیال  کیا گیا۔ ریاض احمد نے کہا کہ حکومت نظر انداز ہونے والے ممالک کی مارکیٹوں تک رسائی کیلئے ہنگامی بنیادوں پر پالیسی مرتب کرے،بیرون ممالک پاکستانی سفارتخانوں  کومقامی درآمدکنندگان سے رابطوں کیلئے ڈائریکٹری مرتب کرنے کا ٹاسک سونپا جائے، انہیں سفارتخانوں میں مدعو کر کے مصنوعات کی مارکیٹنگ کی جائے اوران سے  حاصل ہونے والی معلومات سے پاکستانی برآمد کنندگان کوآگاہ کیا جائے جس سے مصنوعات کی تیاری اور غیرملکی مارکیٹوں کے رجحان کے بارے میں بھی آگاہی حاصل  ہو سکے گی۔

۔انہوں نے کہا کہ حکومت عالمی نمائشوں میں شرکت اور وفود کی سطح پر تبادلوں کیلئے بھی اقدامات کرے۔

مزید :

کامرس -