18سے 50سال کے افراد عمرہ کر سکیں گے، 50افراد کا گروپ ہو گا:نئی عمرہ پالیسی جاری 

  18سے 50سال کے افراد عمرہ کر سکیں گے، 50افراد کا گروپ ہو گا:نئی عمرہ پالیسی ...

  

 لاہور (میاں اشفاق انجم سے) دنیا بھر کے لئے یکم نومبر سے شروع ہونے والے خارجی افراد کے لئے عمرہ پالیسی جاری کر دی گئی، 18سال سے50 سال کے افراد عمرہ کر سکیں گے،50 افراد کا گروپ ہو گا جو ایک ساتھ حرم جا سکیں گے،14دن کے پیکیج میں گروپ ایک عمرہ کر سکے گا،سات دن کے پیکیج میں چار دن مکہ مکرمہ اور تین مدینہ منورہ رہ سکیں گے۔ ایک فلور پر50افراد رہ سکیں گے، بوفے سسٹم ختم، تین وقت کا کھانا پارسل دیا جا سکے گا۔ سعودی کمپنیاں غیر ممالک سے آنیوالوں کو ہوٹل،ٹرانسپورٹ دیگر سروسز فراہم کرنے کی پابند ہوں گی،ویزہ بذریعہ ایپ ملے گا، پاکستانی ایاٹا کمپنیاں دو لاکھ ریال کی گارنٹی کیساتھ سعودی وزارت سے رجسٹرڈ ہو سکیں گی یکم نومبر سے دیگر ممالک سے عمرہ زائرین آ سکیں گے، عمر ہ اور نمازوں کی اجازت کے لئے ایپ تووا کالنا اورایٹمرنا ایپس کے ذریعے رجسٹریشن اور شیڈول مل سکے گا۔سعودی شہری کے لئے عمرہ کے لئے حد18سے65 سال برقرار رہے گی۔50 کا گروپ ایک جہاز میں سفر کر سکے گا، ایک بس جو45 سیٹر ہے اس میں 21افراد سفر کر سکیں گے۔ ماسک، کورونا ٹیسٹ لازمی ہو گا،مکہ مدینہ سفر میں بس راستے میں نہیں رکے گی، بس کے اندر پارسل کھانا ملے گا، ہوٹل میں ایک کمرے میں دو افراد رہیں گے، ٹیلی فون، ہاٹ لائن براہ راست وزارت صحت سے رابطہ رکھیں گے۔ ایک جہاز سے آنے والے ایک ہوٹل میں رہ سکیں گے، ہر حاجی کا روزانہ درجہ حرارت چیک ہو گا، کمرے میں کھانا نہیں ملے گا، عمارت میں مناسب فاصلے کے پارسل کھانا مل سکے گا، سروسز فراہم کرنے والی کمپنیاں کورونا قوائد کے مطابق ماسک، سینٹی ٹائزر، درجہ حرارت، صفائی رکھنے کے پابند ہوں گے۔ یکم نومبر سے خارجی ممالک سے آنے والوں کے لئے عمرے کا وقت تین گھنٹے سے بڑھا کر چار گھنٹے کرنے کا فیصلہ کیا گیا، چار گھنٹے میں جتنی نمازیں آئیں گی، حرم میں پڑھی جائیں گی۔ خارجی عمرہ والوں کو سعودی وزارت داخلہ مانیٹر اور نگرانی کرے گی۔

عمرہ پالیسی

مزید :

صفحہ آخر -