جام پور: ذخیرہ اندوز بے لگام، لوٹ مارتیز

  جام پور: ذخیرہ اندوز بے لگام، لوٹ مارتیز

  

جام پور  (نامہ نگار)  ملک میں مہنگائی کا جن بے قابو  ہونے سے بنیادی اشیاء کی فراہمی پہنچ سے دورہوگئی۔ جام پور میں (بقیہ نمبر44صفحہ6پر)

 حکومتی دعووں کے باوجود مہنگائی پر کنٹرول نہ کیا جاسکا۔ مجسٹریٹی نظام مکمل طور پر فعال نہ ہونے سے زخیرہ اندوزوں کے حوصلے بلندہوگئے ہیں۔گزشتہ دنوں اسٹنٹ کمشنر جام پور فاروق احمد نے عوامی شکایت پر ایکشن لیتے ہوئے متعدد دودکاندار۔ پیٹرو ل پمپ پر چھاپے مار کرکے سخت کاروائی کی۔لیکن ذخیرہ اندوزی کرنے والے باز نہ آئے۔ شہری علی اکبر خان۔ شاہد الرحیم۔ کندن مائی۔ حلیمہ بی بی نے سروے کے دوان بتایا کہ حکومت کی طرف سے مقرر کر دہ ریٹ پر کوئی چیز نہیں مل رہی۔ گوشت کا حکومتی ریٹ چھ سو ہے لیکن بازار میں اٹھ سو سے ایک ہزار تک فروخت ہو رہا ہے۔اسی طرح ماڈل بازار اور گردنواح میں سبزی فروشوں نے بھی من مانے ریٹ مقرر کر رکھے ہیں۔ غریب دیہاڑی دار کی زندگی اجیرن بن گئی ہے۔ حکومت کی طرف سے جلد مہنگائی پر کنٹرول کرنے کے دعوے کے جارہے ہیں۔ اسی طرح زندگی بچانے والی ادوایات میں دو سو سے زاہد گنا اضافہ کیا گیا۔ مہنگائی کی وجہ سے لوگ خود کشی پر مجبور ہو گئے ہیں۔ انہو ں نے وزیر اعلی پنجاب اور ضلع انتظامیہ سے سرکاری ریٹ پر اشیاء کی فروخت کو یقینی بنانے کے علاوہ مہنگائی کو کنٹرول کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ 2

مزید :

ملتان صفحہ آخر -