نابینا افراد معاشرے کا اہم حصہ، مسائل حل کریں گے، چوہدری محمد سرور 

  نابینا افراد معاشرے کا اہم حصہ، مسائل حل کریں گے، چوہدری محمد سرور 

  

 ملتان (سٹی رپورٹر)پاکستان ایسوسی ایشن آف دی بلائنڈ پنجاب کے زیر اہتمام وائٹ کین سیفٹی ڈے کے حوالے  سے تقریب منعقد کی گئی جس کی صدارت گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے کی جس میں سماجی سیاسی مذہبی رہنماؤں کے علاوہ سعدیہ کرمانی صدر پاکستان(بقیہ نمبر26صفحہ6پر)

 ایسوسی ایشن آف دی بلائنڈ پنجاب، جنرل سیکریٹری سردار عمردراز ڈوگر، فقیر محمد کیفی،نذیر خان، آمنہ منیر ایڈوکیٹ، سرفراز ڈوگر، سید سمیع اللہ شاہ، ظفر اقبال ، سید فرخ شاہ، شبیر گوہر، قاری ابراھیم  بشیر احمد قادری ، خلیل احمد، خالد محمود  شیخوپورہ، غلام مصطفی اعوان، عمر رشید، ملک سجاد سید ظٖفر علی شاہ، حافظ ثنا ء اللہ، علی عباس نقوی سمیت دیگر نے شرکت اور خطاب کیا اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے کہاہے کہ نابینا افراد معاشرے کا اہم حصہ ہیں ان کی بہترین تعلیم کرکے انہیں کار آمد شہری بنایا جاسکتاہے بصارت سے محروم افراد معاشرے پر بوجھ نہیں ہیں بلکہ یہ عظیم افراد ہیں ان کی تعلیم و تربیت کرنے والے بھی عظیم ہیں نابینا افراد کے مسائل حل کرنے کے لئے بھرپور کوشش کروں گا انہوں نے کہاہے کہ جلد ہی بصارت سے محروم افراد کے لئے کام کرنے والے اداروں کے سربراہاں سے ملاقات کرکے ان کے مسائل حل کریں گے انہوں نے کہاہے کہ میری خواہش ہے کہ بلائنڈ بچے گورنر ہاوس میں میرے مہمان بنیں انہوں نے کہاہے کہ نابینا افراد ہر شعبہ زندگی میں گراں قدر خدمات سر انجام دے رہے ہیں ان کا نصب العین تعلیم تربیت اور خدمت کرنا ہے ان کو سہولیات فراہم کرنا موجودہ حکومت کا وژن ہے تحریک انصاف کے منشور مین خصوصی افراد پر فوکس کیا گیا ہے میرا 50 سال سے سوشل کاموں کا تجربہ ہے جو لوگ اپنا پیسہ اور وقت ایسے بچوں کے لیے وقف کرتے ہیں وہی عظیم لوگ ہی  کسی کی خدمت کرنے مین جو مزا ہے وہ دنیا کی کسی چیز میں نہیں ہے میں نے بزنس سیاست میں بڑا مقام حاصل کیا لیکن جو تسکین اور سکون خیراتی اداروں میں جا کر ہوتی وہ گورنر بن کر بھی نہیں ملتی جب مستحق افراد کی مدد کرتا ہوں تو مجھے خوشی ملتی ہے پوری دنیا کی تاریخ می  دولت او عہدے والوں کے بجائے انسانیت کی خدمت کرنے والوں کا نام روشن ہوا مسلم لیڈرز کے پاس کوٹھیاں جائیداد نہیں تھیں لیکن دنیا ان کے نام سے کانپتی تھی ہمیں اپنی کمزوریوں اور خامیوں پر قابو پانا پڑے گا پاکستان کے چیف آف آرمی سٹاف کا نوٹس لینا اور تفتیش کا حکم دینا بڑی بات ہے تفتیش کے نتائج آنے تک کچھ کہنے کا فائدہ نہیں ہے اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے پاکستان ایسوسی ایشن آف دی بلائنڈ پنجاب کی صدر سعدیہ کرمانی نے کہاہے کہ پاکستان میں 20 لاکھ آفراد مکمل طور پر بلائنڈ ہیں 60 لالھ کے قریب جزوی طور پر  نابینا ہیں مختلف ادارے ان افراد کے لیے کام کر ہے ہیں 15 اکتوبر کا دن نابینا افراد کے ساتھ یکجہتی کے طور پر منایا جاتا ہے سفید چھڑی کا دن منانے کا مقصد معاشرے کو آگاہی فراہم کرنا ہے پاکستان ایسوسی ایشن آف دی بلائنڈ پنجاب کے جنرل سیکریٹری سردار عمردراز ڈوگر نے کہاہے کہ نابینا افراد کو بھیک مانگنے سے بچانا پی اے بی کا مشن ہے اس مشن کی تکمیل کے لئے پی اے بی کے سابق صدر قائم خان کرمانی نے دن رات جدوجہد کی ان کی وفات کے بعد اب ان کی صاحبزادی سعدیہ خان کرمانی کی کی قیادت میں پاکستان ایسوسی ایشن آف دی بلائنڈ پنجاب دن رات نابینا افراد کی خدمت کرنے میں مصروف عمل ہے۔

بلائنڈ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -