ڈی ایچ کیو ہسپتال لیہ: مبینہ غلط آپریشن سے خاتون کی حالت تشویشناک

   ڈی ایچ کیو ہسپتال لیہ: مبینہ غلط آپریشن سے خاتون کی حالت تشویشناک

  

 چوک اعظم(نامہ نگار) ڈی ایچ کیو ہسپتال لیہ کی لیڈی ڈاکٹر کی مبینہ غفلت  سے ڈلیوری آپریشن کے دوران مریضہ شازیہ کی آنت کاٹ دی مریضہ کی حالت تشویشناک ہوگئی لیڈی ڈاکٹر نے سنگین غلطی چھپانے کے لیے مریضہ شازیہ کے یکے بعد دیگرے چار مزید آپریشن(بقیہ نمبر9صفحہ6پر)

 کر ڈالے تفصیل کے مطابق کوٹ سلطان کی رہائشی شازیہ زوجہ محمد عمران ڈی ایچ کیو ہسپتال لیہ میں ڈلیوری آپریشن کے لیے آئی لیڈی ڈاکٹر نے ڈلیوری آپریشن کے دوران سنگین غفلت کا مظاہرہ کرتے ہوئے مریضہ کی آنت کاٹ دی اور جرم چھپانے کے لیے مریضہ شازیہ کو سٹیچنگ کرنے کے بعد وارڈ میں شفٹ کرکے رفوچکر ہو گئی وارڈ میں داخل ہونے کے بعد مریضہ کو شدید درد لاحق ہوئی اور ساتھ ہی آپریٹ والی جگہ سے بڑی مقدار میں خون بہنے لگا مریضہ کوفوری طور پر لیڈی ڈاکٹر نازیہ قیصر نے آپریشن تھیٹر میں منتقل کر کے یکے بعد دیگرے مزید چار آپریٹ کیے خون زیادہ بہہ جانے کی وجہ سے ڈاکٹر مریضہ کو خون میں پانی ملاکر بلڈ لگاتی رہی جس سے مریضہ کے پلیٹ لیٹس کم ہوگئے اور مریضہ شازیہ کی حالت مزید تشویشناک ہوتی چلی گئی تاہم ہسپتال کے ڈاکٹر محمد رمضان نے مریضہ کی بگڑتی حالت کے پیش نظر ملتان نشتر ہسپتال ریفر کر دیامریضہ شازیہ کے خاوند محمد عمران نے صحافیوں کو بتایا کہ ڈی ایچ کیو ہسپتال لیہ کی لیڈی ڈاکٹر نے سنگین غفلت کا مظاہرہ کیا ڈلیوری اپریشن کے دوران میری بیوی کی ایک تو آنت کاٹ دی خون زیادہ بہہ جانے کی وجہ سے مریضہ کو ملتان نشتر ہسپتال میں خون کی 22 بوتلیں لگیں اور پانچواں آپریشن دوبارہ ہو چکا ہے متاثرہ مریضہ کے خاوند محمد عمران نے محکمہ ہیلتھ کے اعلی افسران سے نوٹس لیکر انسانی جانوں سے کھیلنے والی مزکورہ لیڈی ڈاکٹر کے خلاف سخت کاروائی کا مطالبہ کیا ہیض

مزید :

ملتان صفحہ آخر -