سی ٹی ڈی سے مقابلہ خود کش جیکٹ بنانے کے ماہر2 دہشت گرد ہلاک

           سی ٹی ڈی سے مقابلہ خود کش جیکٹ بنانے کے ماہر2 دہشت گرد ہلاک

  

کراچی(کرائم رپورٹر)شہر سکھر کے جعفر روڈ پرکاؤنٹر ٹیررازم ڈپارٹمنٹ (سی ٹی ڈی) گارڈن سے مقابلے میں کالعدم تنظیم تحریک طالبان پاکستان کے 2 مبینہ دہشت گرد مارے گئے ہیں، دہشت گرد خود کش جیکٹ بنانے کے ماہر تھے۔سی ٹی ڈی گارڈن نے کالعدم تنظیم کے مبینہ دہشت گردوں کی اطلاع ملنے پر ضلع سکھر میں جعفر آباد روڈ پر کارروائی کی تو موٹر سائیکل سوار 2 مبینہ دہشت گردوں نے پولیس پر فائرنگ کر دی۔انچارج سی ٹی ڈی چوہدری صفدر کے مطابق جوابی فائرنگ میں دونوں مبینہ دہشت گرد زخمی ہو گئے، جنہیں طبی امداد کے لیے اسپتال منتقل کیا جا رہا تھا تاہم دونوں راستے میں دم توڑ گئے۔انہوں نے بتایا کہ ہلاک ہونے والے مبینہ دہشت گردوں کی شناخت محب اللہ خان اور محمد انور کے نام سے ہوئی ہے۔ایس ایچ او سی ٹی ڈی سکھر علی نواز سومرو کے مطابق دہشت گردوں کے خلاف سی ٹی ڈی سکھر اور گارڈن کراچی نے مشترکہ کارروائی کی، ہلاک ہونے والے دونوں دہشت گردوں کا تعلق ٹی ٹی پی طارق گیدڑ گروپ سے ہے۔علی نواز سومرو نے بتایا کہ واقعے کا مقدمہ گارڈن پولیس کے اے ایس آئی محمد یونس کی مدعیت میں درج کرلیا گیا ہے، جس میں انسداد دہشتگردی ایکٹ کے دفعات بھی شامل کی گئی ہیں۔ انچارج سی ٹی ڈی چوہدری صفدر کے مطابق مارے گئے دہشت گرد خود کش جیکٹ بنانے کے ماہر تھے، جن سے خود کش جیکٹ بنانے کا سامان، 2 پستول اور موٹر سائیکل برآمد ہوا۔انچارج سی ٹی ڈی کے مطابق مارے گئے دہشت گرد سیکورٹی فورسز پر حملوں میں ملوث تھے، 10-2008 کے دوران ان دہشت گردوں نے متعدد حملے کیے تھے۔ہلاک ہونے والے مبینہ دہشت گردوں کے قبضے سے اسلحہ، دھماکا خیز مواد اور موٹر سائیکل برآمد ہوئی ہے۔انہوں نے بتایا کہ ہلاک دہشت گردوں کے قبضے سے اسلحہ، دھماکا خیز مواد، کیلیں، نٹ بولٹ، بال بیرنگ، ڈیٹونیٹر وائر اور موٹر سائیکل ملی ہے۔سی ٹی ڈی کے انچارج چوہدری صفدر نے بتایا کہ مقابلے میں ہلاک ہونے والے دہشت گروں کا تعلق کالعدم تحریکِ طالبان پاکستان سے تھا۔

مزید :

صفحہ آخر -